پی کے 82،پی ٹی آئی میں شمولیتوں کاسلسلہ بدستور جاری

اتوار 19 نومبر 2017


سوات ( ) پی کے 82،پی ٹی آئی میں شمولیتوں کاسلسلہ بدستور جاری ، دیگرسیاسی جماعتوں سے تعلق رکھنے والے سینکڑوں افراد کی تحریک انصاف میں شمولیت، یونین کونسل شموزئی کے گاؤں چونگئی میں PML،ANP اورجماعت اسلامی کودھچکا، سیکڑوں لوگوں کے پی ٹی آئی میں شمولیت، چونگئی کے ممتاز شخصیت اکرام خان اورجماعت اسلامی کے کسان کونسلر سلیم خان اپنی سیکڑوں ساتھیوں اورخاندان سمیت پی ٹی آئی میں شامل ، چونگئی گراؤنڈ میں پی ٹی آئی کابہت بڑا جلسہ، جلسہ سے اکرام خان ، سلیم خان کسان کونسلر تحصیل ناظم گوہرایوب اورضلعی کونسلرزمین اورڈاکٹرامجدکاخطاب، اکرام خان اورسلیم خان نے اپنی خطاب میں کہاکہ پی ٹی آئی کے چارسال کارکردگی سے متاثرہوکرپی ٹی آئی میں شمولیت اختیارکررہی ہے ، ہم نے چالیس سالہ پارٹی رفاقت کو چھورکر پی ٹی آئی میں شمولیت اختیارکی کیونکہ پی ٹی آئی حق اورصداقت کے پارٹی ہے، پی ٹی آئی نے قلیل عرصے میں پورے صوبہ کانقشہ تبدیل کیا۔ تمام اداروں کو مضبوط کیاترقی کے سفرکوشروع کیا ان کا شموزئی چارسال پہلے کے شموزئی سے بہت مختلف ہے ۔ یہاں پر سکول اپ گریڈ ہوگئے نئے سکول بن گئے یہاں کے ٹوٹی پھوٹی سڑکیں بن گئی گلی کوچے پختہ ہوگی پانی کے مسائل ختم ہوگئی ، ٹیوب ویلز پر سولرسسٹم لگ گئی بجلی کے نئے ٹرانسفارمرلگ گئے ، اب پاشی کیلئے نہریں بن گئی، ڈاکٹرامجدنے اپنی خطاب میں کہا کہ ہم اے این پی کی طرح ٹوپی ڈرامہ شمولیتی نہیں کرتے۔ہمارے شمولیتی انقلابی شمولیتی ہوتے ہیں روزانہ سکڑوں افراد پی ٹی آئی مین جوق درجوق شامل ہورہے ہیں۔ لوگ کارکردگی کی بنیاد پر پی ٹی آئی میں شامل ہورہے ہیں۔ اورہمارے پارٹی میں جولوگ آرہی ہے ۔ وہ تعلیم یافتہ سفیدپوش غریب اورنوجوان لوگ ارہے ہیں ۔ معاشرے میں ان کا اپناکردارہوتاہے۔ وہ معاشرے کے اچھی لوگ ہوتے ہیں اسلئے پی ٹی آئی کاقافلہ روزبروز بڑھتاجارہاہے۔ پی ٹی آئی نے چارسال میں پی کے 82میں چالیس نئے سکولز بنائے ، ڈگری کالج، منطورکرایا۔ سولرسسٹم لگائے۔ روڈز بنائے ، ترانسفارمراوربجلی کے کھمبے دیں، سکولوں میں اساتذہ کی کمی کوپوراکیا، ہسپتالوں میں ڈاکٹرز کو بھرتی کروایا۔ صحت انصاف کارڈ کا تحفہ دیالیکن اسکے بدلے میں اے این پی کی حکومت میں اے این پی والوں نے اپنی عوام کو اپنی گھروں سے بھگایا۔ بے گناہ لوگوں کو جیلوں میں ڈالا۔ سکولوں کو بندکروایا۔ نوکریوں کوفروخت کیا، کمیشن کھایا، چوری کی عوام کے حقوق کوغضب کیا یہ سب ان کے پانچ سالہ کارکردگی تھی ، پورے بریکوٹ تحصیل میں ایک نیا سکول نہیں بنایاایک نیا ٹیوب ویل نہیں بنایاایک بھی سڑک تعمیر نہیں کیاالٹا دہشتگردی کو پروان چڑھایا۔ اسلئے لوگ ان سے بدظن ہوگئے ہیں لوگوں میں احساس محرومیوں کو پروان چڑھایا۔ لوگوں کے تذلیل میں کوئی کسر نہیں چھوڑی۔ اسلئے 2013کے الیکشن میں عوام نے ان کو بدترین شکست سے نوازا۔ اورپھر 2015کے بلدیاتی الیکشن میں بھی بدترین شکست دی اورانشاء اللہ 2018کے الیکشن میں عوام کے طاقت سے ان پختون دشمن اورترقی کے دشمنوں کوبدترین شکست سے نوازے گی ، اوردوبارہ پی ٹی آئی کو ووٹ دیکر دوبارہ حکومت میں لائے گی۔ عوام نے ابھی سے فیصلہ کیاہے ۔ کہ پی ٹی آئی کو دوبارہ ووٹ دیناہے۔ اورترقی کے سفرکو جاری رکھناہے۔ آخرمیں ڈاکٹرامجد نے پی ٹی آئی میں نئے شامل ہونیوالے لوگوں کو پی ٹی آئی کے ٹوپیاں پہنائے۔ اورمبارکباد دی ،ڈاکٹرامجدنے پیغام دیاکہ عمران خان کا پیغام گھرگھرتک پہنچائیں۔
 


کہانی کو شیئر کریں۔


آپ یہ بھی دیکھنا پسند کریں گے

اپنی رائے کا اظہا ر کریں۔



Total Comments (0)

تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ مانندآئینہ محفوظ ہیں۔

بغیر اجازت کسی قسم کی اشاعت ممنوع ہے

Developed by : Murad Khan