ملاکنڈڈویژن میں ہرقسم کے ٹیکس نفاذ کومستردکرتے ہیں ٹمبرمرچنٹس ایسوسی ایشن

جمرات 07 اپریل 2016


درگئی (نامہ نگار) ٹمبرمرچنٹس ایسوسی ایشن درگئی ملاکنڈکے صدرحاجی امیراعظم خان ،جنرل سیکرٹری مکرم خان صباؔ ،جائینٹ سیکرٹری سبحان شیرین ،حاجی سرورخان ،حاجی امیرزمان،حاجی انورشاہ اوردیگرنے ہنگامی پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ ہم ملاکنڈڈویژن میں ہرقسم کے ٹیکس نفاذ کومستردکرتے ہیں ۔اوراگر حکومت نے اپنے فیصلے پر نظرثانی کرکے اس ظالمانہ اقدام کو واپس نہیں لیاتو پوری ملاکنڈڈویژن کے عوام کیساتھ احتجاجی تحریکوں میں صف اول کاکردار اداکرینگے ۔انہوں نے کہاکہ ملاکنڈڈویژن پہلے سے گھمبیر مسائل کی دلدل میں پھنساہواہے جس میں سرفہرست دہشت گردی کی لہر،سوات اپریشن ،آئی ڈی پیز،زلزلے اورحالیہ سیلابوں کی وجہ سے یہاں کے مصیبت ذدہ عوام فاقہ کشیوں پر مجبورہیں تودوسری جانب حکومت ان پر مختلف ٹیکسوں کی شکل میں اضافی بوجھ ڈال کر خودکشیوں پر مجبورکررہے ہیں ملاکنڈڈویژن میں پوراانفراسٹرکچر تباہ ہیں جس میں تعلیمی ادارے ،ہسپتال اوردیگر ادارے شامل ہیں جسکی وجہ سے یہاں کے عوام کو درپیش چیلنجزکاسامناہے ۔انہوں نے کہاکہ حکومت کی ناقص پالیسوں کی وجہ سے ٹمبر ایسوسی ایشن اورلکڑ کے کاروبارسے وابستہ سینکڑوں سرمایہ کاروں کی خطیرسرمایہ گلگت بلتستان،چیلاس اورناردرن ایریاکوہستان میں عرصہ درازسے پھنساہواپڑاہے جسکی حکومت کو کوئی فکر لاحق نہیں اورجسکی وجہ سے ٹمبر سے وابستہ افراد کی کروڑوں اوراربوں روپے ڈوب کر دیوالیہ ہوچکے ہیں جنکی وجہ سے آج انکے ڈھیروں اورگھروں کے چھولے ٹھنڈے ہوکر کسمپریسی کی زندگی گزاررہے ہیں ۔انہوں نے حکومت سے پرزور مطالبہ کیاکہ ملاکنڈڈویژن سے انکم ٹیکس ،کسٹم ٹیکس اوردیگر ٹیکسوں کے اعلانیہ کو واپس لینے کیساتھ ساتھ نادرن ایریا میں حویلیاں ،درگئی ملاکنڈاوردیگر علاقوں سے وابستہ ٹمبربرادری کی پڑی ہوئی کروڑوں روپے کی لکڑی لانے سے پابندی ہٹاکر انکے مسائل میں کمی کرکے کاروبارکو ختم ہونے سے بچائیں ۔جن سے سرکاری خزانے میں ریونیوکی شکل میں لاکھوں اورکروڑوں روپے جمع ہوکر ملکی معیشت پر بھی صرف ہوگی ۔


کہانی کو شیئر کریں۔


آپ یہ بھی دیکھنا پسند کریں گے

اپنی رائے کا اظہا ر کریں۔



Total Comments (0)

تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ مانندآئینہ محفوظ ہیں۔

بغیر اجازت کسی قسم کی اشاعت ممنوع ہے

Powered by : Murad Khan