لکی مرو ت ، دفتر پر فائرنگ کرنے والے ملزمان 72 گھنٹوں کے اندر ٹریس

بدھ 16 مئی 2018


لکی مروت (مانند نیوز ڈیسک) لکی پولیس نیلکی شہر میں خیبر نیوز کے رپورٹر لیاقت سیام کے دفتر پر فائرنگ کرنے والے نامعلوم ملزمان کو 72 گھنٹوں کے اندر ٹریس کرکے گینگ کا ایک سرغنہ ملزم علی محمد سکنہ پہاڑ خیل تھل کو گرفتار کرکے ان کے قبضے سے واردات میں استعمال ہونے والا اسحلہ آبرامد کرلیا،جبکہ ملزم کے نشاندہی پر گینگ کا دوسرا ساتھی شاکر بھی بہت جلد گرفتار کرلیا جائے گا، ڈی پی او عارف شہباز خان نے تفصیلات دیتے ہوئے تبایا کہ چند روز قبل رات کے اندھرے میں نامعلوم افردا نے لکی شہر کے لاری آڈے کارگل چوک پر واقعہ جیبر نیوز اور پی ایم نیوز کے دفتر فائرنگ کی جس سے دفتر کے شیشے اورگیٹ کو نقصان پہنچا تھا اور خوش قسمتی دفتر بند ہونے کی وجہ سے کو جانی نقصان نہیں ہوا تھا واقعے کی اطلاع جیسے ہی ڈی پی او کو ملی لیاقت سیام کی مدعیت نامعلوم افراد کے خلاف مقدمہ درج کرکے ڈی پی او عارف شہباز خان نے ملزمان کو ٹریس کرنے کے لئے خصوصی پولیس ٹیم تشکیل دی گئی اور ٹاسک کو ایس ایچ او لکی جاوید کی قیادت میں انچارج چوکی لکی سٹی سب انسپکٹر ایاز خان اور شعبہ تفتیش کے اے ایس آئی محمد اسماعیل خان اور خفیہ ادارے کے اہلکاروں پر مشتمل پولیس ٹیم نے 72 گھنٹوں کے آندر اندر ٹاسک مکمل کرتے ہوئے گینگ کے ملزم علی محمد سکنہ پہاڑ خیل تھل کو گرفتار کرکے ان کے قبضے سے الہ واردات میں استمال ہونے والہ تیس بور پستول برآمد کرلی جبکہ ملزم کی نشاہدی پر گینگ کا دوسرا شاکر کو بہت جلد گرفتار کرلیا جائے گا، پولیس کا کہنا تھا کہ ملزم کے دوران تفتیش انکشاف کرتے ہوئے کہ ہم نے اس لیے نیوز رپورٹر کے دفتر پر فائرنگ کی کہ انہوں نے چند دن پہلے ہمارے ایک ساتھی کو جسکو پولیس نے گرفتار کیا تھا انہوں نے اسکو میڈیا پر چلایا تھا جسے ہمارے ساتھی کی بدنامی ہوئی مزید ملزم کا کہنا تھا کہ ہم نے اس لئے فائرنگ کی کے ایک تو میڈیا والے خوفزدہ ہوجائے ینگے اور دوسری پولیس کی بدنامی بھی ہوجاے گی، دریں اثنا ڈی پی او عارف شہباز خان نے ملزمان کو ٹریس کرنے اور گرفتار کرنیپر ایس ایچ او جاوید اور پولیس ٹیم کو تعریفی اسناد اور نقد انعامات دیئے کا اعلان کیا، اس کارروائی پر شعبہ صحافت سے تعلق رکھنے والے برادری نے لکی مروت پولیس زبردست خراج تحسین پیش کیا اور ڈی ہی او عارف شہباز خان اور ایس ایچ او لکی جاوید کا خصوصی شکریہ ادا کیا،پولیس ترجمان شاھد


کہانی کو شیئر کریں۔


آپ یہ بھی دیکھنا پسند کریں گے

اپنی رائے کا اظہا ر کریں۔



Total Comments (0)

تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ مانندآئینہ محفوظ ہیں۔

بغیر اجازت کسی قسم کی اشاعت ممنوع ہے

Developed by : Murad Khan