قاضی میڈیکل کمپلیکس نوشہرہ سہولیات سے محروم

پیر 10 اپریل 2017


اربوں روپے کی لاگت سے تعمیر ہونے والا قاضی میڈیکل کمپلیکس نوشہرہ تمام بنیادی سہولیات سے محروم مریضوں کیلئے ہسپتال میں ایمرجنسی اورادویات ناپید حکومت اور بورڈ آف گورنرز میڈیکل کمپلیکس نوشہرہ کے تمام دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے نوشہرہ کے عوام ہسپتال کی کارکردگی سے مایوس ایک بار پھر پشاور اور مردان کے ہسپتالوں کا رخ کرنے پر مجبور بورڈآف گورننگ میڈیکل کمپلیکس کی ناقص کارکردگی، غفلت سامنے آگئی تفصیلات کے مطابق ایک ماہ قبل نوشہرہ میں اربوں روپے کی لاگت سے تعمیر ہونے والا قاضی میڈیکل کمپلیکس نوشہرہ کا افتتاح پی ٹی آئی کے چیئرمین عمران خان اور وزیراعلیٰ پرویز خان خٹک نے کیاتھا جس میں بورڈ آف گورننگ کے ممبران نے میڈیکل کمپلیکس میں مریضوں کو مفت طبی سہولیات کی فراہمی کے ساتھ ساتھ مریضوں کو تین وقت کا مفت کھانے کی فراہمی کے تمام دعوے کئے تھے لیکن حال یہ ہے کہ ہسپتال میں کھانا تو دور کنار مفت ادویات اور ڈاکٹر بھی موجود نہیں ایمرجنسی وارڈ میں بھی موجود نہیں ہوتا نوشہرہ کے عوام نے ایک بار پھر پشاور لیڈی ریڈنگ اور مردان میڈیکل کمپلیکس کا رخ کردیا جبکہ اکثریتی عوام ڈی ایچ کیو نوشہرہ میں علاج سے مستفید ہورہے ہیں جبکہ قاضی میڈیکل کمپلیکس کی انتظامیہ خواب خرگوش کے مزے لے رہے ہیں عوام نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ نامکمل ہسپتال کی افتتاح کی کوئی ضرورت نہیں تھی کیونکہ عوام کو بلڈنگ کی طبی سہولیات کی ضرورت ہے حکومت کو چاہیے کہ وہ قاضی میڈیکل کمپلیکس میں تمام طبی سہولیات کی فقدان کا نوٹس لے اور ہسپتال انتظامیہ اور بورڈ آف گورنرزکی غفلت اور لاپرواہی کے خلاف کاروائی کریں۔


کہانی کو شیئر کریں۔


آپ یہ بھی دیکھنا پسند کریں گے

اپنی رائے کا اظہا ر کریں۔



Total Comments (0)

تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ مانندآئینہ محفوظ ہیں۔

بغیر اجازت کسی قسم کی اشاعت ممنوع ہے

Powered by : Murad Khan