بڑھتی ہوئی آبادی ایک چیلنج ہے۔ شکیل احمد

پیر 10 Jul 2017



وزیرِ اعلیٰ خیبر پختونخوا کے مشیر برائے بہبود آبادی شکیل احمد ایڈووکیٹ نے کہا ہے کہ آبادی کی تیزی کیساتھ بڑھتی ہوئی شرح پوری دنیا میں ایک بڑا چیلنج ہے یہی وجہ ہے کہ اقوام متحدہ اس اہم مسئلے کے بارے میں معاشرے کی آگہی کیلئے ہر سال 11جولائی کو بطورِ عالمی یومِ آبادی مناتاہے تاکہ اس گھمبیر مسئلے کے بارے میں عوام میں شعور اجاگر کیا جائے اور بڑھتی ہوئے آبادی سے رونما ہونے والے مسائل ۱کے سدِ باب کیلئے پائیدارحل ڈھونڈ لئے جائیں ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے عالمی یومِ آبادی کے موقع پر قوم کے نام اپنے ایک پیغام میں کیا۔ وزیرِ اعلیٰ کے مشیر نے کہا کہ بہبود آبادی کے دن کو عالمی سطح پر منانے کا مقصدبڑھتی ہوئی شرح آبادی کے کنٹرول اور معاشرے کی ترقی و خوشحالی کیلئے اقدامات اٹھانے کیلئے مشترکہ سوچ پیدا کرانا ہے تاکہ خاندان کی خوشحال زندگی کیلئے بہتر منصوبہ کرنے کو فروغ دیا جائے۔ عوام کو اختیار دیا جائے اور اقوامِ عالم کو ترقی دی جائے۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں آبادی والے مسائل کو مدِ نظر رکھتے ہوئے مستقبل کے چیلنجز سے نبرد�آزما ہونے کیلئے ٹھوس او ر پائیدار اقدامات کر نے ہونگے کیونکہ مستقبل قریب میں اس مسئلہ کا سنگین صورتحال اختیار کرنے کا اندیشہ موجود ہے کیونکہ اگر اس رفتار سے پوری دنیا اور باالخصوص پاکستان میں آبادی کی شرح بڑھتی گئی تو چند ہی سالوں میں ہماری آبادی خطر ناک حد تک آگے بڑھ جائیگی اس لئے ہمیں آج ہی سے اس سنگین صورتحال کے پیشِ نظر بہترین منصوبہ بندی کا بند باندھناہوگا۔ انہوں نے کہا کہ خوشحالی و کامیابی کا راز بہتر منصوبہ بندی میں پوشیدہ ہے اور اس ضمن میں مرد و خواتین کو صحت وتعلیم کی مساوی سہولیات کی فراہمی اور دیگر آسائشوں کو بہم پہنچانا انتہائی ضروری ہے جبکہ موجودہ صوبائی حکومت محکمہ بہبود آبادی کے ذریعے صوبے کے تمام اضلاع میں برابری کی بنیاد پر زچہ و بچہ کی صحت مند زندگی کیلئے نمایاں اقدامات اُٹھا رہی ہے اور ہر ضلع میں بنیادی مراکز صحت کی تو سط سے خاندانی منصوبہ بندی اور اس سے متعلق معاشرے کی آگہی کیلئے سرکاری اہلکار خدمات سرانجام دیتے ہیں جبکہ گھر گھر اور ذرائع ابلاغ کے ذریعے بھی مہمات سرانجام دی جاتی ہیں اور صوبائی حکومت نے بہبود آبادی کے شعبے کی ترقی و فروغ کیلئے کئی اہم منصوبے شروع کئے ہیں جس کے مستقبل قریب میں دوررس نتائج سامنے آئینگے


کہانی کو شیئر کریں۔


آپ یہ بھی دیکھنا پسند کریں گے

اپنی رائے کا اظہا ر کریں۔



Total Comments (0)

تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ مانندآئینہ محفوظ ہیں۔

بغیر اجازت کسی قسم کی اشاعت ممنوع ہے

Powered by : Murad Khan