لڑکی کی پیدائش ماضی کے طرح ایک حادثہ نہیں ہیلفنگ ہنڈز

بدھ 13 Sep 2017


بٹ خیلہ(نمائندہ مانند) ہمارے معاشرے میں عورت کودوسری درجے کی مخلوق بھی سمجی جاتی ہے اورعام طورپران کوان کی بنیادی ضروریات سے محروم رکھاجاتاہے اگرہم ان تمام ترغیرضروری پابندیوں سے اجتناکرے اورعورتوں توان کی جائز حقوق جیسے تعلیم ،روزگاراورساتھ ساتھ فنی تعلیم سے اراستہ کرے توابادی پرمشتمل یہ حصہ بھی معاشرے کے ترقی میں اہم کرداراداکرسکتے ہیں ۔ان خیالات کااظہاردی ہیفنگ ہنڈز کے زیراہتمام دوروزہ تربیتی ورکشاپ سے کورڈینیٹرولیدشہزاد اورعزیرخان نے خطاب کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہاکہ آج کے معاشرے میں لڑکی کی پیدائش ماضی کے طرح ایک حادثہ نہیں رہی لیکن اب بھی متوسط گھرانوں میں اوسط شکل وصورت کیلئے لڑکیوں کیلئے زندہ گی کسی سانحے سے کم نہیں ہوش سنبھالتے ہی لڑکیوں کے ذہن میں یہ بات ڈدال دی جاتی ہے کہ ان کی زندہ گی کانصب العین شادی ہے اوران کے بچپن میں یہ باورکرایاجاتاہے کہ لوگوں خصوصاًمخالف کے معیارپرپوراترنااورخوبصورت نظرانا عورت کی مجبوری ہے ۔


کہانی کو شیئر کریں۔


آپ یہ بھی دیکھنا پسند کریں گے

اپنی رائے کا اظہا ر کریں۔



Total Comments (0)

تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ مانندآئینہ محفوظ ہیں۔

بغیر اجازت کسی قسم کی اشاعت ممنوع ہے

Powered by : Murad Khan