تخت بھائی،لاپتہ بچی کی لاش برامد

منگل 13 فروری 2018


تخت بھائی(مانند رپورٹ) گزشتہ شام تخت بھائی کے شہری علاقہ سے لاپتہ ہونے والی تین سالہ کمسن بچی کی نعش گھر کے سامنے نکاسی آب کے نالے سے مل گئی ۔بچی کی نعش ملتے ہی علاقے میں کہرام جبکہ بچی کی والدین پر غشی کے دورے پڑ گئے ۔تفصیلات کے مطابق گزشتہ شام شہری علاقہ محلہ میاں محب شاہ سے تعلق رکھنے والے تحصیل کورٹ کے سینئر قانون دان نعیم خان ایڈوکیٹ کے اسسٹنٹ عبدلرازق کی تین سالہ بچی امامہ گھر کے سامنے سے اچانک لاپتہ ہوئی تھی، رشتہ داروں اور علاقے کے عوام کی مسلسل دن رات تلاش میں ناکامی کے بعد منگل کے روز تحصیل تخت بھائی کے ناظم ممتاز خان مہمند اور ٹی ایم او سید فرمان علی شاہ کی خصوصی ہدایت پر ٹی ایم اے انکروچمنٹ انچارج ماجد خان کی نگرانی میں انکروچمنٹ اور سینٹیشن عملے کی سرچ ٹیم تشکیل دی گئی جنہوں نے نہر کنارے پر واقع نکاسی آب کے نالے کی بڑے پیمانے پر سر چ شروع کر دی جس دوران متوفی بچی امامہ کی نعش مل گئی ۔ نعش ملتے ہی علاقے میں کہرام جبکہ والدین پر غشی کے دورے پڑ گئے ۔ واقع کی اطلاع ملتے ہی اے ایس پی تخت بھائی سرکل محمد عثمان ٹیپو اور ایس ایچ او تھانہ ساڑو شاہ منظور خان نے اپنے ٹیم کے ہمراہ جائے وقوعہ پہنچ کر بچی کی نعش پوسٹ مارٹم کے لیے تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال جبکہ بعد میں مردان میڈیکل کمپلیکس بھجوا دیا۔ ذرائع کی مطابق متوفیہ بچی گھر کے سامنے نکاسی آب کے نالے میں گرکر سر پر شدید چوٹ آنے سے موت کے منہ میں چلی گئی تھی ۔متوفیہ بچی کو منگل کی شام ہزاروں اشکبار آنکھوں اور سسکیوں کے ساتھ مقامی قبرستان میں سپرد خاک کر دیا گیا۔نماز جنازہ میں جے یو آئی (ف) ضلع مردان کے امیر و سابق ایم این اے مولانا محمد قاسم، ڈیڈک کمیٹی مردان کے چیئرمین و رکن صوبائی اسمبلی افتخار علی مشوانی کے علاوہ سیاسی و سماجی شخصیات اور عمائدین علاقہ نے کثیر تعداد میں شرکت کی ۔ 
 


کہانی کو شیئر کریں۔


آپ یہ بھی دیکھنا پسند کریں گے

اپنی رائے کا اظہا ر کریں۔



Total Comments (0)

تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ مانندآئینہ محفوظ ہیں۔

بغیر اجازت کسی قسم کی اشاعت ممنوع ہے

Developed by : Murad Khan