بریکوٹ ، شوکت یوسفزئی قیام امن کے ایورڈ ز سے محروم

ہفتہ 07 اپریل 2018


بریکوٹ (مانند رہورٹ) سوات میں قیام امن کے بعد وفاقی اور صوبائی حکومتوں نے خدمات پر ایورڈ ز کے تقسیم میں دیگر ایماندار آفسیر ز اور سرکاری اہلکاروں کی طرح شوکت یوسفزئی کو نامعلوم وجوہات کی بناء پر محروم کر رکھا تھا جس پر اس وقت سوات کے سیاسی و سماجی حلقوں نے غم و غصے کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ شوکت یوسفزئی نے ڈی سی او سوات کے حیثیت سے سواتی عوام کی جو خدمت کی ہے وہ کسی سے پوشید ہ نہیں ہے اور آج دس سال بعد بھی سوات کے لوگ ان کی قربانیوں کا ذکر تے ہیں ۔سوات کے لئے ان کی جو خدمات ہیں و ہ تاریخ میں سنہری حروف میں لکھا جائے گا ۔سازش تھی یا کوئی اوروجہ کہ انہیں ایورڈ سے محروم رکھا گیا تھا مگر قدرت نے بے سہاروں ،لاچاروں اور سواتی عوام کے بے لوث خدمت کا صلہ دیتے ہوئے پشاور ہائی کورٹ کے فیصلے کی پیروی کرتے ہوئے حکومت خیبرپختونخوا نے ایڈیشنل سیکرٹری محکمہ زراعت شوکت علی یوسفزئی (BS-19 افسر محکمہ ماہی پروری) کی فوری طورپر صوبائی مینجمنٹ سروس میں ادغام کے احکامات جاری کئے ۔ ان کی سروس کے قواعد وضوابط ،سول سرونٹ ایکٹ 1973 اوراس کے ماتحت رولز کے تحت ہوں گے۔ اس امر کااعلان اسٹیبلیشمنٹ ڈیپارٹمنٹ حکومت خیبرپختونخوا کی جانب سے جاری کردہ ایک اعلامیے میں کیاگیا۔واضح رہے کہ شوکت علی یوسفزئی کی سروس کو سول سرونٹ ایکٹ میں تبدیل کرنے کے لئے عدالت نے انکے حق میں فیصلہ دیا تھا جس کے خلاف صوبائی حکومت نے سپریم کورٹ سے رجوع کیا سپریم کورٹ نے بھی پشاور ہائی کورٹ کا فیصلہ برقرار کرھنے کا فیصلہ دیا ۔یاد رہے شوکت علی یوسفزئی اس سے قبل ہری پور اور سوات میں ڈپٹی کمشنر کے عہدوں پر ڈیوٹی سر انجام دے چکے ہے ،شوکت یوسفزئی کو ڈپٹی کمشنر سوات ان حالات میں تعینات کردیا تھا جب سوات میں کوئی سول سرونٹ ڈیوٹی دینے کے لئے تیار نہیں تھا ،انہوں نے وران ڈیوٹی 65 ہزار سے زائد متاثرین کو ہری پور میں ریلیف دیا ۔سوات کے مخدوش صورت کے دوران انہوں نے اپنے فرائض بخوبی سرانجام دئیے اور جہاں بھی کوئی ناخوشگوار واقعات رونماء ہوتے وہاں بروقت پہنچ کرحالات کو کنٹرول کرنے کی ہر ممکن کوشش کرتے ۔
 


کہانی کو شیئر کریں۔


آپ یہ بھی دیکھنا پسند کریں گے

اپنی رائے کا اظہا ر کریں۔



Total Comments (0)

تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ مانندآئینہ محفوظ ہیں۔

بغیر اجازت کسی قسم کی اشاعت ممنوع ہے

Developed by : Murad Khan