درگئی ، پلئی درہ میں منعقدہ عوامی ا جتماع

ہفتہ 07 اپریل 2018


درگئی(مانند رپورٹ) راہ امن پاکستان ملک کے کونے کونے میں سودی نظام،انڈرپلے،قبضہ مافیا،منشیات فروشوں اوردیگرمعاشرتی برائیوں کوجڑسے اکھاڑنے کیلئے برسرپیکارہے،مملکت خداددادپاکستان میں امن وآمان اورغریب عوام کو جاگیرداروں،وڈیروں اوربدمعاشوں سے نجات دلانے میں سیکیورٹی فورسزاورپولیس نے جوقربانیاں دی ہیں وہ کسی سے پوشیدہ نہیں جبکہ بیرونی آقاؤں کو خوش کرنے کیلئے پاک فوج اورملک کے دوسرے سیکیورٹی ایجنسزکو مختلف ہیلوں بھانوں سے بدنام کیاجارہاہے جوملک میں افراتفری،بدامنی پھیلانے ،سماج دشمن اورملک دشمن عناصرکے ایجنڈے کو فروغ دینے کے مترادف ہے ۔ان خیالات کااظہارملاکنڈایجنسی کے دورافتادہ علاقے پلئی درہ میں منعقدہ عوامی ا جتماع سے راہ امن پاکستان کے مرکزی چئیرمین نشترخان،صوبائی صدرپیراسلم خان، ڈپٹی جنرل سیکرٹری دوست محمدخان،صوبائی ترجمان اورنگزیب نسیم،رابطہ سیکرٹری نورشادخان،انفارمیشن سیکرٹری پیرہمایون باچا،ضلعی نائب صدرمردان شکورخان،فنانس سیکرٹری ملک تاج خان مہمند،قومی نظریاتی تنظیم پلئی کے مشران سیدوہاب خان،ملک اکبرخان،مولانااسداللہ خان،تاج باچااوردیگرعلاقہ عمائدین نے خطاب کرتے ہوئی کی۔اس موقع پرعلاقہ پلئی کے تمام سیاسی ،مذہبی جماعتوں کے سربراہان اورسماجی حلقوں سے تعلق رکھنے والے علاقہ عوام کثیرتعدادمیں موجودتھے ۔علاقہ پلئی کے مشران اورزعماء نے راہ امن پاکستان کے ذمہ داران کو علاقائی مسائل سے آگاہ کیا۔تقریب کے شرکاء نے پاکستان زندہ باد،پاک فوج اورپولیس زندہ بادکیساتھ ساتھ نعرہ تکبیراللہ اکبرکے فلک شگاف نعرے بھی لگائے ۔راہ امن پاکستان کے مرکزی چئیرمین نشترخان اوردیگرنے کہاکہ ملک میں جاری دہشت گردی اوربدامنی کے فضاء سے عوام کو نجات دلانے میں پاک فوج،پولیس اوردوسرے سیکیورٹی ایجنسیزنے جولازوال قربانیاں دی ہیں وہ کسی سے ڈھکی چھپی نہیں ۔لیکن آج ایک چندافرادان قربانیوں پرپانی پھیرکرانہی کوبدنام کرتے پرتلے ہوئے ہیں جوکہ مختلف ہیلوں بھانوں سے ملکی اداروں اورعوام کے درمیان خلاء پیداکرنے اوراپنے مذموم مقاصدکے حصول میں لگے ہوئے ہیں جنکو ہرصورت ناکام بناناہم سب کی ذمہ داری ہے ۔انہوں نے کہاکہ ملکی سطح پر راہ امن پاکستان کے قیام کااصل مقصدمعاشرتی برائیوں ،کرپشن،سودی نظام،انڈرپلے،قبضہ مافیااورڈرگ مافیاکاقلع قمع کرانااورغریب عوام کیساتھ ہونیوالے ظلم وناانصافیوں پرقابوپاناہے ۔انہوں نے کہاکہ معاشرے سے برائیوں کاخاتمہ عوامی تعاون کے بغیرممکن نہیں ،راہ امن پاکستان کے قیام کے بعدملک اوربالخصوص صوبہ خیبرپختونخواکے کونے کونے میں اغواکاروں،بارگینگ کے کاروبارانڈرپلے ،پرائیویٹ سودسسٹم،منشیات فروشوں اوردیگر جرائم پیشہ افرادکے خلاف مؤثرکاروائیاں عمل میں لائی گئی ہے جن سے علاقہ عوام نے سکھ کاسانس لیاہے ۔انہوں نے علاقہ عوام کویقین دلایاکہ راہ امن پاکستان کے تمام ذمہ داران آپ کے نشاندہیوں پرمعاشرتی برائیوں سے نجات دلانے میں بھرپورتعا ون جاری رکھے گی لیکن اس کیلئے سب سے اولین شے باہمی اتحادواتفاق ہے کیونکہ ہمارے بے اتفاقی اوریگانگت سے ان مٹھی بھرسماج دشمن اورملک دشمن عناصرکے حوصلے بلندہوئے ہیں لیکن الحمداللہ عوامی طاقت کے سامنے یہ کچھ بھی نہیں ۔اس موقع پر علاقہ پلئی کے مشران نے علاقائی درپیش مسائل کاذکرکرتے ہوئے علاقہ عوام کیساتھ محکمہ صحت،تعلیم ،واپڈا،گیس،اورآن گنت انتظامی امورمیں نامناسب رویہ اپنانے پرتحفظات کااظہارکیااورحکام بالاسے پرزورمطالبہ کیاعلاقہ پلئی میں بے روزگاری ختم کرنے کیلئے فیکٹریوں کاقیام عمل میں لایاجائے جبکہ علاقائی سطح پرسیمنٹ فیکٹری کے قیام میں روڑے اٹکانے پرشدیدغم وغصے کااظہاربھی کیا۔مقررین نے کہاکہ سب پہلے ہمیں سودی کاروباروں پرقابوپانے کیلئے عملی اقدامات اٹھانے ہونگے کیوں کہ سودی نظام سے ملکی وقار کیساتھ ساتھ اسلامی اقداراورمذہبی روایات کی پامالی ہورہی ہے جوکہ اللہ اوراسکے رسول ﷺ سے جنگ کے مترادف ہے ۔انہوں نے کہا کہ آج سے کچھ عرصہ قبل یہاں پر اغواء کاروں اورجرائم پیشہ نیٹ ورک کاراج تھاجوکہ ملک اورصوبے کے کونے کونے سے مخیرافرادکو اغواء کرکے لاکھوں کروڑوں روپے ہتھیالیتے ،جبکہ آج الحمداللہ پاک فوج اورپولیس کی بھرپورکاروائیوں سے ان ناسوروں کامکمل صفایاگیاہے جن سے یہاں پر تاجربرادری اورعلاقہ عوام نے سکھ کاسانس لیاہے ۔انہوں نے کہاپہلے صوبے کے مختلف علاقوں میں ایسے گینگ ماسٹربرسرپیکارتھے جوکہ پشتون علاقوں سے خواتین کو شادیوں کے نام پنجاب اورملک کے دوسرے صوبوں میں فروخت کے کالے دھندے کررہے تھے جس پرراہ امن پاکستان نے ایکشن لیکر انہیں ایساسبق سیکھایاہے کہ عمربھریہاں پرشادیاں تودورکی بات ہے بھولے سے ان علاقوں کے نام بھی اپنے زبانوں پرنہیں لائیں گے ۔مقررین نے کہاکہ ہمارے آباواجدادنے پاکستان کو بنانے میں بیش بہاقربانیاں اپنے ائندہ نسلوں کی روشن مستقبل اورغلبہ اسلام کیلئے دی ہیں جبکہ ملکی نااہل سیاستدانوں،جاگیرداروں اوروڈیروں نے ملک میں حقیقی اسلامی نظام کے بجائے یہاں پرلوٹ مار،کرپشن اورغریب عوام کے جائزحقوق پرڈھاکے ڈالنے کیلئے کوئی کسرنہیں چھوڑی جس سے ملک میں بدامنی ،دہشت گردی اوردین اسلام کے منافی نظام کوپروان چڑھایاہے جس کیلئے راہ امن پاکستان کے رہنماؤں نے کمرکس لی ہے جس پرقابوپانے اورمعاشرتی برائیوں کو جڑسے اکھاڑپھینکنے کیلئے عوامی تعاون کی اشدضرورت ہے تاکہ وہی سماج دشمن اورملک دشمن عناصراپنے مذموم مقاصد میں ہرگزکامیاب نہ ہو۔
 


کہانی کو شیئر کریں۔


آپ یہ بھی دیکھنا پسند کریں گے

اپنی رائے کا اظہا ر کریں۔



Total Comments (0)

تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ مانندآئینہ محفوظ ہیں۔

بغیر اجازت کسی قسم کی اشاعت ممنوع ہے

Developed by : Murad Khan