قبائلی اضلاع کے لئے 10 سالا ترقیاتی منصوبہ جات پر مشاورتی اجلاس کا انعقاد

منگل 26 مارچ 2019


جمرود (مانند نیوز ڈیسک) مشاورتی اجلاس میں ضلع خیبر کے مشران،کشران،تمام سرکاری محکموں کے افسران،میڈیا اور سیول سوسائٹی کے افراد نے بڑی تعداد میں شرکت کی۔اجلاس میں وزیر اعلی خیبر پختونخواہ محمود خان کے مشیر برائے انرجی اور ہائیڈرل پاور حمایت اللہ خان نے خصوصی طور پر شرکت کی اس موقع پر انکے ساتھ ڈی سی خیبر محمود اسلم وزیر، ایڈیشنل ڈی سی خیبر اور دیگر حکومتی افسران موجود تھے۔مشاورتی اجلاس میں ضلع خیبرکے مختلف سٹیک ہولڈرز کے ساتھ قبائلی اضلاع کے لئے زیر تجویز دس سالہ ترقیاتی پروگرام کے حوالے سے انکی رائے ،تجاویز اور مشورے لئے گئے ۔حکومت قبائلی اضلاع کے لئے آئندہ 10سالوں میں 1000ارب روپے کے فنڈ خرچ کریگی جو کہ قبائلی اضلاع میں رہائش پذیر باشندوں کے ٖفلاح و بہبود کے لئے استعمال ہونگے ۔مشاورتی اجلاس میں شامل ضلع خیبر کے عوام نے حکومت سے مطالبہ کیا اور یہ تجاویز پیش کی کہ قبائلی اضلاع میں دہشت گردی کے دوران کافی نقصان ہوا ہے جس میں مالی و جانی دونوں نقصانات شامل ہیں ۔جانی نقصان کا ازالہ تو ممکن نہیں ہے لہذا قبائلی اضلاع میں تباہ حال تعلیمی اداروں کی تعمیر و مرمت ،ہسپتالوں میں سہولیات عدم دستیابی ختم کرتے ہوئے سہولیات فراہم کئے جائے،بجلی لوڈ شیدنگ ختم کرکے ملک کے باقی علاقوں کی طرح قبائلی اضلاع میں بجلی کی فراہمی یقینی بنائی جائے،پانی سکیمیں منظور کرتے ہوئے ٹیوب ویلوں پر سولر سسٹم لگایا جائے،مواصلاتی نظام بہتر بنایا جائے،قبائلی اضلاع میں چھوٹے انڈسٹریاں قائم کرکے نوجوانوں کو روزگار دیا جائے تاکہ قبائلی عوام بھی ملک کی ترقی میں اپنا فعال کردار ادا کرسکے ۔اس موقع پر وزیر اعلی خیبر پختونخواہ کے مشیر برائے انرجی اینڈ ہائیڈر پاور حمایت اللہ خان کا کہنا تھا کہ صوبائی حکومت قبائلی عوام کو انکے حقوق دینے میں مکمل طور پر سنجیدہ ہیں اور اس حوالے سے مختلف اقدامات اٹھائے جارہے ہیں۔قبائلی عوام بہت جلد اپنے علاقوں میں ترقی کا نیا دور اور تبدیلی دیکھے گے۔


کہانی کو شیئر کریں۔


آپ یہ بھی دیکھنا پسند کریں گے

اپنی رائے کا اظہا ر کریں۔



Total Comments (0)

تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ مانندآئینہ محفوظ ہیں۔

بغیر اجازت کسی قسم کی اشاعت ممنوع ہے

Developed by : Murad Khan