چترال میں پی ٹی سی ایل عملہ حرکت میں آگئی

اتوار 21 اپریل 2019


چترال (مانند نیوز ڈیسک) پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن لمیٹڈ کے عملہ نے چترال بازار میں ٹیلیفون Exchangeسے متصل ہسپتال روڈ کی جانب کافی عرصے سے قبضہ مافیا کو بھگادیا۔ PTCL کے عملہ نے اپنے دفتر کے ساتھ بالکل لگے ہوئے تجاوزات کو ہٹادئے۔ ان میں عرائض نویس، ہارڈوئیر کا دکان، جوتوں کا دکان، کباڑی، چائے کا ہوٹل اور دو عدد کمرے بھی بنائے گئے تھے۔ ٹیلیفون اکسچینج کے احاطے میں غیر قانونی طور پر کئی دکانیں زمین پر سج گئے تھے ان قبضہ مافیا نے نہ صرف اس احاطے میں باقاعدہ دکان بنائے تھے بلکہ انہوں نے آہستہ آہستہ سڑ ک میں کرسی ، بنچ رکھ کر اس پر بھی قبضہ کرنا چاہتے تھے اور یہ سب کچھ اسسٹنٹ کمشنر کے دفتر کے بالکل سامنے ہورہا تھا۔ پی ٹی سی ایل حکام نے کئی بار ضلعی انتظامیہ کو ان تجاوزات ہٹانے کیلئے خط لکھا تھا مگر سب رائگان گئی ۔ آحر کار اسسٹنٹ بزنس منیجر کے نگرانی میں محکمے کے اہلکاروں نے ان تجاوزات کے حلاف آپریشن شروع کردی اور ایک ہی دن میں کریک ڈاؤن کرکے ان چبوتروں، عارضی دکانوں اور لکڑی وغیرہ دیگر سامان ہٹاکر باہر پھینگا جسے بعد میں ان کے مالکان نے اٹھا کر دوسری جگہہ منتقل کئے۔


کہانی کو شیئر کریں۔


آپ یہ بھی دیکھنا پسند کریں گے

اپنی رائے کا اظہا ر کریں۔



Total Comments (0)

تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ مانندآئینہ محفوظ ہیں۔

بغیر اجازت کسی قسم کی اشاعت ممنوع ہے

Developed by : Murad Khan