0

آئی جی پنجاب شعیب دستگیر کی جگہ انعام غنی تعینات

اسلالم آباد(مانند نیوز ڈٰیسک)نئے ائی جی کا تعلق ملاکنڈ کے علا قہ ڈھیری سے ہے۔نئے انسپکٹر جنرل (آئی جی) پنجاب کی تقرری کے لیے ناموں کی سمری اسٹیبشلمنٹ ڈویژن کو بھیج دی گئی، جس میں عامر ذوالفقار، کلیم امام، اے ڈی خواجہ اور محسن بٹ کے نام تجویز کیے گئے ہیں۔

ذرائع کے مطابق آئی جی پنجاب کے نام کی حتمی منظوری وزیرِاعظم عمران خان دیں گے۔

وزیراعظم کی منظوری کے بعد اسٹیبلشمنٹ ڈویژن نوٹیفکیشن جاری کرے گا۔

ذرائع کا مزید کہنا ہے کہ عامر ذوالفقار آئی جی اسلام آباد اور کلیم امام آئی جی موٹرویز ہیں۔

واضح رہے کہ پنجاب حکومت کی جانب سے سی سی پی او لاہور سے اختلافات پر آئی جی پنجاب شعیب دستگیر کو تبدیل کر دیا گیا ہے۔

پولیس سروس آف پاکستان چیپٹر کےصدر راؤ سردار کی زیرِ صدارت اجلاس منعقد ہوا، آئی جی آفس پنجاب میں ہونے والے اجلاس میں تمام افسران شریک ہوئے۔

اجلاس کے دوران شرکاء نے اتفاق کیا کہ سی سی پی او لاہور نے ڈسپلن کی خلاف ورزی کی ہے۔

ذرائع کے مطابق اجلاس میں شرکاء کی جانب سے سی سی پی او کے خلاف ضابطے کی کارروائی عمل میں لانے کے مطالبے سمیت سی سی پی او لاہور کو ڈسپلن کی خلاف ورزی پر عہدے سے ہٹائے جانے کا بھی مطالبہ کیا گیا۔

برطرف انسپکٹر جنرل (آئی جی) پنجاب شعیب دستگیر کی جگہ انعام غنی کو آئی جی پنجاب تعینات کردیا گیا۔

اس حوالے سے اسٹیبلشمنٹ ڈویژن کی جانب سے نوٹیفکیشن بھی جاری کردیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ پنجاب حکومت کی جانب سے سی سی پی او لاہور سے اختلافات پر آئی جی پنجاب شعیب دستگیر کو تبدیل کیا گیا۔اس حوالے سے جاری کردہ نوٹیفکیشن کے مطابق برطرف آئی جی پنجاب شعیب دستگیر کو سیکریٹری نارکوٹیکس کنٹرول ڈویژن لگادیا گیا ہے۔ نئے آئی جی پنجاب انعام غنی پولیس گروپ میں گریڈ 21 کے افسر ہیں۔

خبر پر آپ کی رائے

اپنا تبصرہ بھیجیں