0

سابقہ ایف آر پشاور اور سابقہ ایف آر کوہاٹ کے ترقیاتی منصوبوں سے متعلق اجلاس

پشاور (مانند نیوز ڈیسک) گورنرخیبرپختونخوا شاہ فرمان اوروزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان کی مشترکہ صدارت میں سابقہ ایف آر پشاور اورسابقہ ایف آرکوہاٹ کے ترقیاتی منصوبوں سے متعلق منگل کے روز گورنر ہاؤس میں خصوصی اجلاس منعقد ہوا۔ اجلاس میں ان علاقوں میں تعلیم،صحت،آبنوشی،آبپاشی اور دیگر شعبوں کے جاری ترقیاتی منصوبوں پر پیشرفت کا جائزہ لیا گیا۔ اجلاس کو متعلقہ حکام کی طرف سے مذکورہ علاقوں میں جاری ترقیاتی منصوبوں پر پیش رفت اورمستقبل کے ترقیاتی منصوبوں پرتفصیلی بریفنگ دی گئی۔گورنرشاہ فرمان او ر و زیراعلیٰ محمود خان نے متعلقہ محکموں کو منظورشدہ ترقیاتی اسکیموں پر کام کی رفتار تیز کرنیکی ہدایت کرتے ہوئے کہاکہ ترقیاتی منصوبوں کی طے شدہ وقت کے مطابق تکمیل یقینی بنائی جائے۔ انہوں نے متعلقہ محکموں کو ہر 15 روز بعد منظورشدہ ترقیاتی منصوبوں پرپیش رفت کاجائزہ لینے کی بھی ہدایت کی۔ اس موقع پر گورنرخیبرپختونخواشاہ فرمان کاکہناتھاکہ سابقہ ایف آرپشاور،کوہاٹ کے علاقوں میں ترقیاتی منصوبوں کی تکمیل سے یہاں کے عوام کی محرومیوں کا ازالہ ہو گااورمقامی افراد کو روزگار کے مواقع بھی میسرآئیں گے۔ وزیراعلی محمودخان کاکہناتھاکہ صوبائی حکومت قبائلی اضلاع اور سب ڈویژنز میں ترقیاتی منصوبوں کی تکمیل کیلئے تمام درکار وسائل فراہم کررہی ہے اور صوبائی حکومت اپنے وعدہ کے مطابق ضم شدہ اضلاع اورسب ڈویژنزکی تیز رفتار ترقی کیلئے پُرعزم ہے۔ واضح رہے کہ مذکورہ ترقیاتی منصوبوں میں پینے کے صاف پانی، سولر پمپس کی تنصیب، ہسپتالوں کی اپ گریڈیشن، سول ڈسپنسریز، کالجز اور اسکولوں کے قیام، سڑکوں کی تعمیر وپختگی سمیت دیگر منصوبے شامل ہیں۔اجلاس میں صوبائی محکمے آبپاشی،آبنوشی، صحت اور تعلیم کے انتظامی سربراہان ودیگرمتعلقہ افسران شریک تھے۔

خبر پر آپ کی رائے

اپنا تبصرہ بھیجیں