0

گوجرانوالہ میں ہونے والا عوامی جلسہ عظیم الشان اور تاریخی ہوگا

لاہور (مانند نیوز ڈیسک) امیرجماعت اسلامی صوبہ وسطی پنجاب و صدر ملی یکجہتی کونسل پنجاب وسطی محمد جاوید قصوری نے کہا ہے کہ 25دسمبر کا عوامی جلسہ عظیم الشان اور تاریخی ہوگا۔ مہنگائی، بے روزگاری، لاقانونیت اور اقربا پروری نے میرٹ کی دھجیاں اور عوام کا کچومر نکال دیا ہے۔ تحریک انصا ف کی حکومت نے عوام سے جینے کا حق بھی چھین لیا ہے۔پی ڈی ایم میں شامل جماعتوں کا ذاتی ایجنڈا ہے انہیں بھی عوامی مسائل سے کوئی غرض نہیں۔  ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز مختلف تقریبات سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ حکومت بری طرح بوکھلاہٹ کا شکار ہے۔ حکومت جماعت اسلامی اور دیگر سیاسی جماعتوں کے جلسوں کو روکنے کی بجائے  اپنی کارکردگی کو بہتر بنائے۔یوں محسوس ہوتا ہے کہ حکومت کی پوری توجہ اپوزیشن جماعتوں کے جلسوں کو روکنے پر لگی ہوئی ہے۔پر امن احتجاج جمہوریت کے اندر چلتا رہتا ہے۔حکمران کو خالی خولی بیانات اور کھوکھلے نعروں سے گریز کرنا چاہئے۔ انتظامیہ کی ناکامی اور نا اہلی کی بدولت مسائل میں دن بدن مسلسل اضافہ ہوتا چلا جارہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پٹرولیم بحران کے حوالے سے تحقیقاتی رپورٹ میں ہونے والے ہو شر با انکشافات اس بات کا واضح ثبوت ہیں کہ پورے کا پورا نظام ہی مافیا کے رحم و کرم پر چھوڑ دیا گیا ہے۔ 9کمپنیوں نے اس بحران کی آڑ میں 5ارب روپے کمائے۔ اس حوالے سے مجرمانہ غفلت کا ارتکاب کرنے والوں کے خلاف سخت ترین تادیبی کارروائی ہونی چاہیے۔ محمد جاوید قصوری نے اس حوالے سے مزید کہا کہ عالمی سطح پر تیل کی گرتی قیمتوں سے حکومت نے فائدہ نہیں اٹھایا۔ اگر بروقت فیصلے کرلیے جاتے تو ملک و قوم کو انتہائی بھاری نقصان نہ اٹھانا پڑتا۔ نا اہلیاں سامنے آجانے پر تحقیقاتی رپورٹ کو منظر عام پر لانے کی حکومت کی جانب سے مخالفت واضح کرتی ہے کہ اس کے پیچھے بڑی شخصیات پوشیدہ ہیں۔ ملک و قوم کو لوٹنے والوں کا احتساب کرنا پی ٹی آئی کے انتخابی منشور کا اولین ایجنڈا ہے۔لیکن افسوس کی بات ہے کہ حکومتی صفوں میں بھی کرپٹ اور بد عنوان افراد موجود ہیں۔ جماعت اسلامی مطالبہ کرتی ہے کہ پڑولیم بحران کے اصل ذمہ داران چور اور کرپٹ افراد کے خلاف کارروائی کی جائے۔      

خبر پر آپ کی رائے

اپنا تبصرہ بھیجیں