0

غزہ کی معیشت کو ڈیڑھ ارب ڈالر کا نقصان

غزہ (مانند نیوز ڈیسک) رواں سال غزہ کو کورونا کی وبا سے مقامی معیشت کو ڈیڑھ ارب ڈالر کا نقصان ہوا۔مرکزاطلاعات فلسطین کے مطابق عو امی کمیٹی کے چیئرمین اوررکن پارلیمنٹ جمال الخضری نے ایک بیان میں کہا کہ غزہ کی پٹی میں کورونا کے نتیجے میں معیشت پر منفی اثرات کی وجہ پہلے سے اسرائیل کی مسلط کردہ پابندیاں ہیں۔انہوں نے کہا کہ اسرائیلی پابندیوں، ناکہ بندی اور معاشی قدغنوں کے ساتھ ساتھ کورونا کی وجہ سے پیدا ہونے والی صورت حال کے باعث سال 2020 بدترین سال ہے۔ رواں سال کے دوران غزہ کی پٹی کی معیشت، صحت اور بنیادی انسانی مسائل میں بے پناہ اضافہ ہوا۔الخضری نے کہا کہ غزہ میں کوروناکی وبا سے غذائی عدم تحفظ کا شکار افراد کی تعداد میں 70 فی صد اضافہ ہوا جبکہ غربت کی لکیر سے نیچے زندگی گزارنے والوں کی تعداد 85 فی صد تک جا پہنچی، بے روزگارہ کی شرح 60 فی صد پہنچ گئی، غزہ میں مجموعی طور پر بے روزگار افراد کی تعداد ساڑھے 3 لاکھ ہوچکی ہے۔

خبر پر آپ کی رائے

اپنا تبصرہ بھیجیں