0

جمرودمیں تصادم کا خدشہ ختم، دو فریقین میں صلح

جمرود (مانند نیوز ڈیسک) ضلع خیبر کی تحصیل جمرود میں دو فریقین کے مابین جرگہ مشران کی انتک کوششوں کے بعد صلح ہوگئی تفصیلات کے مطابق گزشتہ ہفتے فریق اول کے صور خان،عابد،فرہاد اور فریق دوم کے واحد جمال خیل اور عادل کے نوجوانوں کے مابین معمولی تکرار کے باعث جھگڑا شروع ہوا تھا جس میں ایک نوجوان کو اسلحہ سے زدوکوب کرکے شدید زخمی کیاتھا جبکہ ان کے موٹرسائیکل کو بھی توڑکر ٹکڑے ٹکڑے کیا تھا جس کے بعد دو نوں فریقین کے مابین بات تصادم تک جا پہنچی تھی اور ایک دوسرے خلاف اسلحہ اٹھا کر موچہ زن ہوگئے تھے جس سے بہت خونریزی کا خدشہ تھا لیکن علاقائی مشران حاجی ملنگ جان، نیاز محمد،لعل بادشاہ،صابر،جانداد اور صمدخان نے بروقت مداخلت کرکے دونوں فریقین کے درمیان جرگہ کے ذریعے فیصلہ کرنے کی کوشش شروع کی اور جرگہ مشران کی انتک کوششوں سے دونوں فریقین کو آپس میں صلح کرنے پر راضی کیا اور اسطرح دونوں فریقین کے افراد ایک دوسرے کے ساتھ بغل گیر ہوئے اور آئندہ پرامن اور آپس میں بھائیوں کی طرح رہنے کا فیصلہ کیا۔واضح رہے کہ جرگہ مشران نے دونوں فریقین سے اس بات کی ضمانت بھی لی ہے کہ آئندہ اگر کسی نے جرگہ کے فیصلے کی خلاف ورزی کرکے جھگڑا کیا تو وہ دس لاکھ روپے جرمانہ ادا کرنے کا پابندہوگا۔

خبر پر آپ کی رائے

اپنا تبصرہ بھیجیں