0

نوشہرہ رشکئی کے رہائشی ٹیکسی ڈرائیور قتل

نوشہرہ (مانند نیوزڈیسک) صوبائی امن جرگہ نے نوشہرہ رشکئی کے رہائشی ٹیکسی ڈرائیور کے قتل میں ملوث ملزمان کی گرفتاری کے لئے 72گھنٹوں کا الٹی میٹم دیتے ہوئے کہا ہے کہ اگر نوشہرہ پولیس نے رشکئی کے رہائشئی غریب ٹیکسی ڈرائیور رحم زیب کے قتل میں ملوث ملزمان کو گرفتار نہ کیا تو صوبائی امن جرگہ جی ٹی روڈ اور موٹروئے کو احتجاجاًہر قسم کی ٹریفک کیلئے بند کر دے گی جسکی تمام تر ذمہ داری نوشہرہ پولیس پر عائد ہوگی ان خیالات کا اظہار صوبائی امن جرگہ کے مرکزی چیئر مین سید کمال شاہ باچا نے نوشہرہ رشکئی میں بیدردی سے قتل ہونے والے ٹیکسی ڈرائیور رحم زیب کے لواحقین سے تعزیت اور اظہار ہمدردی کرتے ہوئے کیا اس موقع پر امن جرگہ کے کوراڈینٹر عابد سلطان، سردار خٹک، اعجاز خٹک، عابد تاج، پیر امجد، میاں امجد علی شاہ عرف پیر باچا اور فلک شیر بھی موجود تھے صوبائی امن جرگہ کے مرکزی چیئرمین سید کمال شاہ باچا نے مزید کہا کہ نوشہرہ میں آئے روز معصوم شہریوں کا بے دردی کے ساتھ قتل عام ہو رہا ہے لیکن پولیس ٹھس سے مس نہیں ہو رہی ہے اور ملزمان کی عدم گرفتاری نہ صرف تعجب ہے بلکہ نوشہررہ پولیس کی کارکردگی پر سوال بھی اٹھا رہی ہے انہوں نے کہا کہ اگر رشکئی کے غریب ٹیکسی ڈرائیور رحم زیب کے ملزمان 72گھنٹوں میں گرفتار نہ ہوئے تو صوبائی امن جرگہ، عمائدین علاقہ سمیت جی ٹی روڈ اور موٹروئے کو ہر قسم کی ٹریفک کیلئے بند کر دی گے۔

خبر پر آپ کی رائے

اپنا تبصرہ بھیجیں