0

شیرگڑھ پریس کلب کے سالانہ انتخابات

شیر گڑھ (مانند نیوز ڈیسک) شیرگڑھ پریس کلب کے سابقہ صدربخت اللّٰہ جان حسرت اور شیرگڑھ پریس کلب میں ممبرشب کے لئے عدالت سے رجوع کرنے والے ارکان نے مشترکہ طورپر شیرگڑھ پریس کلب کے سالانہ انتخابات سیشن 2021 کے نتائج کا نوٹیفیکیشن روکنے کیلئے ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈسیشن جج 1 تخت بھائی سیّد یاسر شبیر کی عدالت میں حکم امتناعی حاصل کرنے کیلیۓ مقدمہ دائرکرکے نتائج کو چیلج کیاہے‌۔تفصیلات کے مطابق شیرگڑھ پریس کلب کے سالانہ انتخابات اس ماہ کےپندرہ تاریخ کو شیرگڑھ پریس کلب میں منعقد ہوۓ تھے اور عین الیکشن کے دن اس وقت ڈرامائی صورتحال پیدا ہںوا جب پریس کلب کے مستقل ممبر شب کیلیے عدالت جانے والے ارکان ولی خان  ،عبداللہ ،فرہادعلی ،نصراللہ حسرت  وغیرہ نے عدالت سول جج  تخت بھائی راشد علی  کا حکم و فیصلہ ڈگری الیکشن کمیشن کے ممبران کے روبروپیش کیاجس میں عدالت نے پریس کلب کے خلاف اور ممبرشب کے حق میں مقدمہ کرنے والوں کے حق میں فیصلہ صادر کیا تھا ۔ لیکن الیکشن کمیشن کے ارکان نے قانونی پیچیدگی کے باعث مقدمہ کرنے والے ارکان کو ووٹ کا حق نہیں دیا اور الیکشن کو سابقہ شیڈول کے مطابق جاری رکھا۔اسکے علاوہ صدارت کے امیدوار بخت اللّٰہ جان حسرت نے صدارت کی الیکشن جیتنے والے  امیدوار جمیل الرحمان شاھین  کے کاغذات پر بھی اعتراض اٹھایا اور  اسکی باقاعدہ تحریری درخواست الیکشن منعقدہ کرنے والے کمیشن کو دی لیکن کمیشن کا کہنا تھا کہ اب بہت دیر ہوگئی ہے۔روزنامہ مانند  آئینہ  کو اپنی ذرائع سے معلوم ہوا ہںے کہ دونوں فریقوں نے نتائج کو عدالت میں چیلنج کیا ہںےجبکہ عدالت نےحکم امتناعی  کے لیے الیکشن کمیٹی سمیت مخالف فریق کو  نوٹس جاری کرکے اگلی پیشی کی تاریخ 3 فرروی 2021 مقرر کیا ہے

خبر پر آپ کی رائے

اپنا تبصرہ بھیجیں