0

آلودگی خاتمے کیلئے زیادہ سے زیادہ پودے لگائے جائیں، صوبائی وزیر برائے جنگلات

پشاور (مانند نیوز ڈیسک) صوبائی وزیر برائے جنگلات و جنگلی حیات اور ماحولیات سید اشتیاق ارمڑ نے کہا ہے کہ آلودگی خاتمے کیلئے زیادہ سے زیادہ پودے لگائے جائیں کیونکہ موجودہ ماحولیاتی تبدیلی کی وجہ سے گلومل وارمنگ کی شدت میں روز بروز اضافہ ہو رہا ہے لہٰذا ماحول کے تحفظ اور موسمی تبدیلیوں سے بچنے کیلئے زیادہ سے زیادہ درخت لگانا معاشرے کے ہر فرد کی ذمہ داری ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے پی کے 69میں ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔صوبائی وزیر نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف حکومت گرین اینڈ کلین پاکستان اور ماحولیاتی آلودگی کیلئے ٹھوس اقدامات اٹھا رہی ہے تاکہ ملک کو آلودگی سے نہ صرف صاف ستھرا کیا جائے بلکہ اسے سر سبز و شاداب بھی بنایا جائے۔انہوں نے کہا کہ حیات آباد سے بڑا گڑھی چندن ہے جو ساٹھ ہزار کنال پر مشتمل ہے، موجودہ حکومت نے دن رات ایک کر کے بلین ٹری فارسٹریشن مہم چلائی جسے سپارکو کے علاوہ غیر ملکی اداروں نے بھی تسلیم کرتے ہوئے کہا کہ گڑھی چندن میں شجر کاری کی گئی ہے۔انہوں نے کہا کہ گڑھی چندن میں مختلف اقسام کے پودے اگائے گئے ہیں اور اگر کسی کو اس پر اعتراض ہے تو وہ خود دیکھنے جا سکتا ہے اس میں محکمہ ہذا سہولیات بھی فراہم کر سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بلین ٹری فارسٹریشن منصوبہ موجودہ حکومت کا ایک تاریخی اور کامیاب منصوبہ ہے جو وزیر اعظم عمران خان کی کوششوں سے جاری ہے۔انہوں نے کہا کہ اب ہمارا فوکس زیتون کے پودے اگانے پر ہے لہٰذا عوام بھی اس میں ہمارا بھر پور ساتھ دیں اور زیادہ سے زیادہ شجر کاری کر کے ماحول کی بہتری میں اپنا کردار ادا کریں انہوں نے کہا کہ اس سے نہ صرف ملک خوردنی تیل میں خود کفیل ہو گا بلکہ لوگوں کو شہد کے کاروبار کو وسعت دینے اور روزگار کی فراہمی میں بھی مدد ملے گی۔

خبر پر آپ کی رائے

اپنا تبصرہ بھیجیں