0

سوات ڈی سی کا دریائے سوات میں بجری نکالنے اور کرش پلانٹس بارے اہم اجلاس

سوات (مانند نیوز ڈیسک) ڈپٹی کمشنر سوات جنید خان کے زیر صدارت ایک ہنگامی اعلٰی سطح اجلاس منعقد ہوا،جس میں اہم فیصلے کیے گئے،اجلاس میں دریائے سوات کے حدودات میں ریت بجری نکالنے کے لیے غیر قانونی کدائی اور کرش پلانٹ سے پیدا ہونے والے صورتحال کا جائزہ لیا گیا۔ اجلاس میں تمام اسسٹنٹ کمشنرز، اسسٹنٹ ڈائرکٹر مائنز اینڈ منرلز، ایس ڈی او ایریگیشن، ڈپٹی ڈائریکٹر ای پی اے، انڈسٹریل ڈیولپمنٹ آفیسر سوات، ایس ڈی پی او سیدو شریف اور دیگر متعلقہ اداروں کے حکام نے شرکت کیں۔ڈپٹی کمشنر نے تمام سٹیک ہولڈرز کی تجاویز و آراء غور و حوض سے سُنے، اور اس سلسلے میں مائنز اینڈ منرلزڈیپارٹمنٹ کو درپیش مسائل اور چیلنجز کا بغور جائزہ لیا گیا۔اور مائنز اینڈ منرلز، ایریگیشن، ای پی اے، اور انڈسٹریل ڈیپارٹمنٹ کے دائرہ کار میں جو خلا پایا گیا ہے، جس کی وجہ سے غیر قانونی مائنگ ہورہی ہے، اور غیر قانونی کرش پلانٹس بھی دریا ئے سوات کا حلیہ بگھاڑنے میں مصروف ہیں۔اس پر بھی تفصیلی بحث ہوئی۔ڈی سی سوات نے تمام اسسٹنٹ کمشنران کو سختی سے ہدایات جاری کی، کہ وہ اے ڈی مائنز اینڈ منرلزاور آئی ڈی او انڈسٹری وغیرہ کے ساتھ مل کر غیر قانونی کدائی اور کرش پلانٹس کے خلاف کریک ڈاون تیز کریں۔اور ساتھ ہی ساتھ ان کے مشینری کو بھی قبضہ کیا جائے اور ایک ہفتے کے اندر ایک مربوط پلان کے تحت کار روائی کریں۔اس مقصد کے لیے ضلعی انتظامیہ نے دفعہ 144پہلے سے لگائی ہے۔ تینوں ڈیپارٹمنٹوں کے ٹیمیں پولیس کے ہمراہ دن رات جگہ جگہ چھاپے مارینگے، اور قانون کے متعلقہ سیکشن کے تحت غیر قانونی کرش پلانٹ اوربجری و ریت کے لیے کدائی کے خلاف کارروائی عمل میں لائی جائیگی۔ اسسٹنٹ ڈائرکٹر مائنز اینڈ منرلز کو ہدایات جاری کی گئی کہ وہ منرلز ایکٹ کے تحت تمام بلاک کے نیلام (Auction) کو تیز تر کیا جائے۔ای پی اے، آ ئی ڈی او، اور مائنز اینڈ منرلز ڈیپارٹمنٹ کو ہدایات جاری کی گئی کہ وہ مل بیٹھ کر رجسٹریشن کے عمل کو مزید شفاف آسان کریں تاکہ اس عمل کو ریگولرائز کیا جا سکے۔ تاہم جو کرش پلانٹس مائنز اینڈ منرلز ڈیپارٹمنٹ کے قواعد و ضوابط پر پورے نہیں اترتے، اور غیر قانونی کام کررہے ہیں، ان کے خلاف ایکشن لیا جائے۔اسی طرح ایریگیشن ڈیپارٹمنٹ کو بھی ہدایت کی گئی کہ وہ مائنز اینڈ منرلز ڈیپارٹمٹ کے ساتھ مل کر کالام سے لیکر لنڈاکے تک ریور بیڈ کے جیوگرافیکل باونڈریز کے ڈیمارکیشن /حد براری مکمل کریں۔تاکہ ان ایریا /زون کو سرکاری پالیسی کے تحت نیلا م کیا جاسکے۔ڈپٹی کمشنر سوات نے کہا کہ یہ آپریشن جاری رہے گا، اور ساتھ ہی ساتھ غیر قانونی کرش پلانٹ اونرز اور مائنرز وغیرہ کو بھی سختی سے تنبیہ دی جا تی ہے کہ وہ بھی غیر قانونی کام روک لیں۔

خبر پر آپ کی رائے

اپنا تبصرہ بھیجیں