0

نورنگ میں یوم یکجہتی کشمیر کے سلسلے میں ریلی

سرائے نورنگ (مانند نیوز ڈیسک) 5 فروری یوم یکجہتی کشمیر کے سلسلے میں دی یونیورسٹی آف لکی مروت کے رجسٹرار انعام اللہ خان کی قیادت میں ریلی نکالی گئی۔جس میں یونیورسٹی کے تمام ڈیپارٹمنٹ کے افسران نے شرکت کی۔ریلی ایڈمن بلاک مین کیمپس سے شروع ہوکر کارگل چوک کے مقام پر اختتام پذیر ہوگیا۔جہاں پر کشمیریوں کے حق میں اور بھارت مخالف نعرے لگائے۔ریلی سے خطاب کرتے ہوئے مقررین کا کہناتھا کہ کہ بھارتی حکومت کشمیرکی جنت۔نطیروادی پرناجائز طریقیسے زبردستی قابض ہیں لیکن انہیں اچھی طرح معلوم ہوناچاہئے کہ جنت کافرکوہرگزنہیں ملے گی۔انہوں نیکہاکہ انشائاللہ کشمیری عوام بھارتی افواج کیخلاف جاری جدوجہدایک دن ضروررنگ لائے گی۔انہوں نے اقوام متحدہ اوردیگرانسانی حقوق کی بین الاقوامی اداروں سے مسلہ کشمیراقوام متحدہ کی قراردادوں کیمطابق حل کیاجائے۔انہوں نے کہاکہ پاکستانی قوم کشمیری بہن بھائیوں کے شانہ بشانہ کھڑی ہیں انہوں نے کہاکہ5 اگست 2019 کو بھارت نے اپنے آئین کے آرٹیکل 370 اور 35 اے کو ختم کر کے مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت کو ختم کر دیا بھارت کا یہ اقدام اینی قتل ہے پلوامہ واقعے کے بعد بھارت کو جس طرح سفارتی و عسکری محاذ پر شکست ہوئی جس کی وجہ سے اچھے ہتھکندوں پر بھارت اتر آیا مسئلہ کشمیر کے حوالے سے پاکستان نے ہمیشہ اقوام متحدہ کی قراردادوں اور عالمی قوانین پر عمل کیا جبکہ بھارت نے اقوام متحدہ کی قراردادوں سے ہمیشہ انحراف کیا ہے کشمیر کے بغیر پاکستان کی آزادی ادھوری ہے اور نامکمل ایجنڈا ہے بابائے قوم قائد اعظم محمد علی جناح نے کشمیر کو پاکستان کی شہ رگ قرار دیا تھا ہم اپنی شہر کو دشمن کے پنجے سے ضرور چھڑائیں گے۔

خبر پر آپ کی رائے

اپنا تبصرہ بھیجیں