0

رکن خیبر پختونخوا اسمبلی کا ایبٹ آباد دارلمان کا اچانک دورہ

ایبٹ آباد (مانند نیوز ڈیسک) رکن خیبر پختونخوا اسمبلی ڈاکٹر سمیرا شمس نے کہا ہے کہ وزیراعظم پاکستان عمران خان اور وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان کے ویژن کے مطابق تحریک انصاف کی حکومت خیبر پختونخوا کے تمام دارلامان کو ماڈل دارلامان بنانے اور مظلوم خواتین کے حقوق کی داد رسی کے لئے خصوصی اقدامات اور قوانین بنائے ہیں جس کے تحت دارلامان مظلوم خواتین کے لئے ہمیشہ کا گھر نہیں بلکہ شیلٹر ہوم بنایا جائے گا جس میں خواتین کو تحفظ کی فراہمی کے ساتھ ساتھ تعلیم میڈیکل، لیگل ایڈ کے سا تھ دیگر تمام سہولیات کی فراہمی کو یقینی بنایا گیا ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے آج اتوار کے روز وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان کی خصوصی ہدایت پر ضلع ہری پور اور ایبٹ آباد کے دارلامانو ں کے دورہ کے موقع پر بات چیت کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر اسسٹنٹ کمشنر ہری پور خانپور سارہ تواب، ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنر ایبٹ آباد ماروی ملک کے علاوہ پاکستان تحریک انصاف خواتین ونگ کی ضلعی اور ڈویژنل صدور، دارلامان کی افسران اور سٹاف بھی موجود تھی۔ ڈاکٹر سمیرا شمس نے کہا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت صوبے کے تمام مظلوم خواتین کے تحفظ کے لیے ہر ممکن اقدامات اٹھا رہی ہے جس کے تحت صوبے کے تمام دارا لمان میں نئی اصلاحات لائی جارہی ہیں اور اس کے لئے باقاعدہ چیف سیکرٹری خیبر پختونخوا کے آفس سے دارلامان کے لئے ایس او پیز جاری کردی گئی ہیں جن پر دارلامان کے انچا رج فوری طور پر عمل درآمد کریں۔انہوں نے کہا کہ کہ خواتین کو ہر ممکن تحفظ کی فراہمی میں وزیر اعلی خیبر پختونخوا نے خصوصی ہدایات جاری کر رکھی ہیں کہ دارلامان میں فوری طور پر اصلاحات لائی جائیں۔ ڈاکٹر سمیرا شمس نے ہدا یت کی کہ انچا رج دارلامان فوری طور پر چیف سیکریٹری خیبر پختو نخوا کی جا نب سے جاری کردہ ایس اوپیز پر عمل درآمد یقینی بناتے ہو ئے ایڈوائزری بورڈ کے سا تھ ساتھ دیگر تمام مشکلات اور مسائل کی تفصیلی رپو رٹ فرا ہم کی جا ئے اورہر ماہ دارلامان میں میڈیکل چیک اپ کے لئے باقاعدہ گائناکالوجسٹ بلائی جائے اور ایس اوپیز کے تحت دیگر تما م سہولیا ت بھی فرا ہم کر نے کی ہدا یت کی۔انہو ں نے مزید کہا کہ ان مظلو م خواتین کو قانونی تحفظ فراہم کرنا حکو مت کی زمہ داری ہے۔

خبر پر آپ کی رائے

اپنا تبصرہ بھیجیں