0

۔3 بہن بھائیوں پر تیزاب پھینک دیا گیا

فیصل آباد (مانند نیوز ڈیسک) کارخانہ بازار ڈرماں والی گلی میں نامعلوم شخص3 بہن بھائیوں پر تیزاب پھینک کر فرار ہو گیا۔ تینوں بچوں کو طبی امداد کے لئے ہسپتال منتقل کر دیاگیا۔ ریسکیوذرائع کے مطابق تنویر احمد کے گھر نامعلوم شخص داخل ہوا اور اس کے تین بچوں 18 سالہ آمنہ، 15 سالہ خدیجہ اور 12 سالہ بیٹے محمد یوسف کے چہروں پر تیزاب پھینک کر فرار ہو گیا۔ بچوں کی چیخ وپکار پر اہل خانہ بیدار ہوئے تو ملزم موقع سے فرار ہو گیا۔ پولیس ذرائع کا کہنا ہے کہ بچوں کی حالت خطرے سے باہر ہے اور ملزم کی گرفتاری کیلئے چھاپے مارے جا رہے ہیں۔ادھرسٹی سمندری کے علاقہ ہاؤسنگ کالونی کے قریب مبینہ پولیس مقابلہ میں 2ڈاکوزخمی ہوگئے جنہیں طبی امداد کے لئے پولیس کی نگرانی میں ہسپتال منتقل کردیاگیا۔پولیس ذرائع کے مطابق موٹرسائیکل پرسوار2ڈاکوموٹرسائیکل سوار علی سے60ہزار روپے کی نقدی لوٹنے کے بعد ڈاکو کار میں سوار ہوئے تو اطلاع ملنے پر پولیس ٹیم نے دونوں ڈاکوؤں کا تعاقب کیا اور انہیں مونیاں بنگلہ کے قریب گھیر لیا۔ ڈاکوؤں نے پولیس کو دیکھ کر فائرنگ کردی تاہم جوابی فائرنگ سے دونوں ڈاکوزخمی ہوگئے جنہیں حراست میں لے لیاگیا جن کی شناخت انصر علی اور آصف علی کے ناموں سے کی گئی ہے جو چک 167گ۔ ب اور ستیانہ روڈ کرامت آبا د کے رہائشی بتائے جاتے ہیں۔ پولیس کے مطابق دونوں ملزمان ریکارڈ یافتہ ہیں۔جب کہ کینال روڈ کشمیر پل 208 چک کے قریب ایک ٹیکسٹائل ملز میں آتشزدگی سے لاکھوں روپے مالیت کا مال جل کر خاکستر ہو گیا۔ ریسکیوٹیم نے موقعہ پرپہینچ کر آگ پر قابو پا لیا۔ آگ لگنے کی وجہ بجلی کے شارٹ سرکٹ بتائی گئی ہے۔ ایک اور واقعہ میں ہسپتال میں زیرعلاج ٹریفک حادثہ کازخمی24گھنٹے بعدجاں بحق ہوگیا۔ذرائع کے مطابق بھوآنہ کا رہائشی 25 سالہ بشیر احمد گھر کے باہر مین روڈ کراس کر رہا تھا کہ اچانک تیز رفتار موٹرسائیکل سے ٹکرا کر گرنے کے بعدشدیدزخمی ہوگیاتھا اُسے تشویشناک حالت میں ہسپتال منتقل کیاگیا مگروہ جانبرنہ ہوسکا۔ضروری قانونی کارروائی کے بعدنعش ورثاکے سپردکردی گئی۔

خبر پر آپ کی رائے

اپنا تبصرہ بھیجیں