0

اداروں پر حملے اور تضحیک کرنا مسلم لیگ (ن) کا پرانا وطیرہ ہے، کامران بنگش

پشاور (مانند نیوز ڈیسک) معاون خصوصی برائے اطلاعات کامران بنگش نے کہا ہے کہ نیب میں پیشی کے موقع پر جلوس لے جانا ملک کو واپس 90 کی دہائی کی سیاست میں لے کر جانے کے مترادف ہے۔ مریم نواز ایک غلط روایت کی بنیاد رکھ رہی ہیں۔ احتساب سے بچنے کے لئے جلوس لے کر جانا کسی طرح بھی مناسب نہیں۔ اداروں پر حملے اور تضحیک کرنا مسلم لیگ (ن) کا پرانا وطیرہ ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے صوبائی وزیر محنت و ثقافت شوکت یوسف زئی کے ہمراہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ(ن)احتساب کے عمل سے بچنے کے لئے اوچھے ہتھکنڈوں پر اتر آئی ہے۔ نیب کی کارروائی میں رخنہ ڈالنے کی صورت میں نیب کے قانون سیکشن 31 کے تحت کارروائی عمل میں لائی جائے گی جس کی سزا 10 سال قید ہے۔ حکومت کسی کو اداروں کی ساکھ کو نقصان نہیں پہنچانے دے گی۔ کامران بنگش نے مزید کہا کہ قانون کی دھجیاں اڑانے سے ادارے کمزور ہوتے ہیں اس لئے ہر حال میں قانون پر عمل درآمد یقینی بنایا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ پی ڈی ایم اپنے مفادات کی جنگ لڑ رہی تھی جو پاش پاش ہوگئی۔پی ڈی ایم کا واحد مقصد کرپشن بچانا اور ذاتی مفادات کا تحفظ تھا۔انہوں نے کہا کہ کورونا کے باوجود ایکسپورٹ میں اضافہ ہورہا ہے۔ خراب معیشت ہمیں ورثے میں ملی تھی جو اب عمران خان کی قیادت میں صحیح سمت جارہی ہے۔عوام کورونا کی تیسری لہر کے پیش نظر ایس او پیز پر عمل درآمد یقینی بنائیں۔

خبر پر آپ کی رائے

اپنا تبصرہ بھیجیں