0

وزیر اعلی سندھ کی ہولی پر ہندو ملازمین کو ایڈوانس تنخواہ دینے کی ہدایت

کراچی (مانند نیوز ڈیسک) وزیراعلی سندھ سید مراد علی شاہ کی جانب سے ہندو برادری کے تہوار ہولی کے موقع پر ہندو ملازمین کو ایڈوانس تنخواہ دینے کی ہدایت جاری کی گئی ہے۔وزیراعلی سندھ سید مراد علی شاہ کی زیر صدارت محکمہ ثقافت، محکمہ صنعت اور محکمہ داخلہ کی اے ڈی پی 21-2020 کا جائزہ اجلاس منعقد کیا گیا۔اجلاس کے دوران مراد علی شاہ کی جانب سے تمام ہندو برادری کو ہولی کی مبارک باد دیتے ہوئے ہدایت کی گئی کہ ڈسٹرکٹ کونسلز ہولی پر ہندو ملازمین کو ایڈوانس تنخواہ اور پینشن ادا کریں۔اجلاس میں وزیر ثقافت سردار شاہ، چیئرمین پی اینڈ ڈی محمد وسیم ودیگر افسران شریک ہوئے۔ترجمان وزیر اعلی سندھ کے مطابق اجلاس کے دوران سید مراد علی شاہ کی جانب سے 188.2 ملین روپے جاری کرنے کی منظوری دی گئی ہے، فنڈز سے کے ایم سی ملازمین کی تنخواہیں اور پینشنز دی جائیں گی، سندھ کی 23 ڈسٹرکٹ کونسلز کو بھی 261 ملین روپے جاری کردیے گئے ہیں۔اجلاس کے دوران وزیر ثقافت سردار شاہ نے وزیراعلی سندھ کو اسکیموں کی پروگریس سے متعلق بریفنگ دی۔بریفینگ کے دوران وزیر ثقافت سردار شاہ کا کہنا تھا کہ گورکھ ہل پر سمر ریزورٹ تعمیر کیا جارہا ہے، ریزورٹ پر 3 بلین روپے کا پروجیکٹ ہے جبکہ 88.9 فیصد کام مکمل ہو چکا ہے۔وزیراعلی سندھ کو اجلاس کے دوران بریفنگ کے دوران بتایا گیا کہ محکمہ ثقافت، سیاحت اور نوادرات کی 44 اسکیمیں ہیں جبکہ ان 44 اسکیموں کے لییاس سال 832 ملین روپے فنڈز رکھے گئے تھے اور  6 جاری اسکیموں کے لیے 67.34 ملین روپے مختص تھے، 33.373 روپے خرچ ہوچکے ہیں۔بریفنگ کے دوران مزید بتایا گیا کہ محکمہ ثقافت کی 4 اسکیموں کے لیے  177.280 ملین روپے 3 قسطوں میں جاری کیے گئے جبکہ سندھ حکومت نے مارچ تک 849 ملین روپے جاری کر دیئے ہیں۔اجلاس کے دوران وزیراعلی سندھ کی جانب سے ہدایت کی گئی کہ محکمہ ثقافت اپنی 44 اسکیمیں مکمل کریں، حکومت نے فنڈز جاری کردیئے ہیں، جون تک ان اسکیموں کو مکمل کر کے بجٹ بک سے نکال دیں۔

خبر پر آپ کی رائے

اپنا تبصرہ بھیجیں