0

پرائیویٹ ایجوکیشن نیٹ ورک نے مطالبات تسلیم نہ ہونے پر اسمبلی کے گھیراو کا اعلان کر دیا

نوشہرہ (مانند نیوز ڈیسک) پرائیویٹ ایجوکیشن نیٹ ورک نے مطالبات تسلیم نہ ہونے پر خیبر پختونخواہ اسمبلی کے گھیراو کا اعلان کر دیا، کل پیر کے روز سے خیبر پختونخواہ کی تمام نجی تعلیمی اداروں کے ڈائریکٹر ز، پرنسپلز، اساتذہ، طلبا و طالبات کے والدین کے ہمراہ خیبر پختونخواہ اسمبلی کے سامنے مطالبات تسلیم ہونے تک پڑاو ڈالنے کا اعلان اس سلسلے میں پرائیویٹ ایجوکیشن نیٹ ورک نوشہرہ کے ضلعی صدر قاضی فضل حکیم نے میڈیا کو بتایا کے موجودہ حکومت نے کورونا کی آڑ میں ملک بھر کی تمام تعلیمی ادارے بند کر دئیے ہیں البتہ صوبہ بھر نہیں بلکہ ملک بھر میں زندگی کے باقی شعبہ ہائے زندگی کے لئے ایس او پیز مرتب کرتے ہوئے رواں دواں رکھے جارہے ہیں لیکن تعلیمی اداروں خاص کر نجی تعلیمی اداروں کیلئے کسی قسم کی ایس او پیز بھی مرتب نہیں کئے جا رہے ہیں جس کی وجہ سے نونہالان قوم کا مستقبل داو پر لگ گیا ہے اور اس سے بڑھ کر تعلیمی اداروں کے ساتھ ظلم اور کیا ہو سکتی ہے کہ دیگر شعبہ ہائے زندگی رواں دواں اور تعلیمی ادارے بلخصوص نجی تعلیمی ادارے بند کئے ہوئے ہیں انہوں نے مزید کہا کہ اس عظیم الشان دھرنے میں سول سوسائٹی، وکلاء اور تاجر برادری سے بھی شرکت کی استداعا ہے انہوں نے مزید کہا کہ موجودہ حکمران استعماری قوتوں کے ایجنڈے پر عمل پیرا ہیں اور اسی ایجنڈے کے زریعے انہوں نے پاکستان کی نوجوان نسل پر تعلیم اور حصول علم کے دروازے بند کر دئیے ہیں لیکن قوم نے حکومت کی تعلیم دشمن پالیسی مسترد کر دی ہے اور اب پوری قوم کا مطالبہ ہے کہ حکومت ایس او پیز کے ساتھ تعلیمی ادارے کھول دیں۔

خبر پر آپ کی رائے

اپنا تبصرہ بھیجیں