0

نوشہرہ پولیس کی مال مقدمہ میں سنگین گھپلوں کا انکشاف

نوشہرہ (مانند نیوز ڈیسک) نوشہرہ پولیس کی مال مقدمہ میں سنگین گھپلوں کا انکشاف،نوشہرہ پولیس نے مال مقدمہ کے 5 ملین روپے غائب کردیئے،پولیس نے مرغوں کے اکھاڑے پر چھاپے کے دوران اکھاڑے سے جمع شدہ 5 ملین روپے اور قیمتی مرغ غائب کردیئے،رشکئی میں مرغوں کے اکھاڑے میں پولیس نے پنجاب،صوابی،مردان اور نوشہرہ سے تعلق رکھنے والے تماشبینوں سے بھی موقع پرجامعہ تلاشی کے دوران پیسے جمع کئے اور قیمتی مرغ تحویل میں لے لئے،تاہم ایف آئی آر میں 6 لاکھ 80 ہزار اور 14 مرغوں کے بجائے 9 مرغ ظاہر کئے،گزشتہ روزنوشہرہ کے علاقہ رشکئی میں بین الصوبائی مرغ اکھاڑے پر پولیس پارٹی نے چھاپہ مار کر 71 افراد گرفتار کی گرفتاری عمل میں لاکر ان سے 6 لاکھ 80 ہزار روپے اور 9 مرغ اپنی تحویل میں لینے کا دعوی کیا تھا،تاہم اس حوالے سے FIRمیں نامزد ملزمان نے اب ہوش اڑانے والے انکشافات کئے اور،احاطہ عدالت میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ایف آئی آرمیں نامزد ملزمان نے بتایا کہ اس واقع کے مال مقدمہ میں تاریخی گھپلے کئے گئے ہیں،مرغ اکھاڑے پر چھاپہ کے دوران قریبی اضلاع کے تماشبینوں کی جامہ تلاشی کی اورموقع پر5 ملین سے زائد خطیر رقم اور14 قیمتی مرغ تحویل میں لئے جبکہ ایف آئی آر میں صرف 6 لاکھ 80 ہزار روپے اور 9 مرغ ظاہر کئے گئے 71 تماشبینوں کی گرفتار ی سے پولیس نے اپنی بڑی کاروائی کا چرچہ کیا نوشہر ہ پولیس کی مال مقدمہ میں گھپلوں اور خرد برد کے ایسے ہی کئی مزید واقعات پہلے بھی کئی بار رونما ہوچکے ہیں بتایاجاتا ہے کہ مرغ اکھاڑے پر چھاپے کی نگرانی نوشہرہ پولیس کے اعلی حکا م کرتے رہے نوشہر ہ پولیس کی اجانب سے مال مقدمہ میں سنگین گھپلوں اور خرد برد کے ہوش اڑا دینے والے واقعہ کا سامنے آنے کے بعد عوامی و سماجی حلقوں نے انسپکٹر جنرل آف پولیس خیبر پختونخواہ داکٹر ثنا اللہ عباسی سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے

خبر پر آپ کی رائے

اپنا تبصرہ بھیجیں