0

مئی کے دوران ملک میں مہنگائی کی شرح میں اعشاریہ 10 فیصد اضافہ

اسلام آباد (مانند نیوز ڈیسک) گذشتہ ماہ مئی کے دوران ملک میں مہنگائی کی شرح میں اعشاریہ 10فیصد اضافہ ہوا جبکہ ملک میں مہنگائی کی سالانہ شرح10.87فیصد رہی ہے۔گذشتہ ماہ چکن 16.87فیصد اور پھل 10.54فیصد مہنگے ہوئے، گندم کا آٹا 9.75فیصد مہنگا ہوا ہے جبکہ گوشت4.68فیصد مہنگا ہوا ہے۔انڈے، دالیں، صابن اور ادویات بھی ماہانہ بنیاد پر مہنگی ہوئی ہیں، ایک سال کے دوران مصالحہ جات26.71فیصد اور گھی22فیصد مہنگا ہوا ہے، چینی 21.62فیصد اور کوکنگ آئل کی قیمت میں  20.62اضافہ ہوا ہے،خوراک اور مشروبات کی قیمتوں میں 14.83فیصد اضافہ ہوا۔ گذشتہ سال کی نسبت رواں سال ٹرانسپورٹ14فیصد مہنگی ہوئی ہے۔ وفاقی ادارہ شماریات کی جانب سے ماہانہ اور سالانہ  بنیاد پر جاری اعدادوشمار کے مطابق گذشتہ سال کے مقابلہ میں  رواں سال چکن 60فیصد مہنگا ہوا ہے، ا نڈے55فیصد، گندم20فیصد اورآٹے کی قیمت میں.54 28فیصد اضافہ ہوا ہے، ایک سال میں مصالحہ جات کی قیمت 26.71فیصد اضافہ ہوا ہے۔ محکمہ شماریات کے مطابق دیہی علاقوں میں ماہانہ بنیادوں پر چکن6 22.5فیصدمہنگا ہوا ہے جبکہ آلو10.13فیصد مہنگے ہوئے ہیں، دیہی علاقوں میں پھل سات فیصد جبکہ گوشت چھ فیصد مہنگا ہوا ہے۔ محکمہ شماریات کے مطابق دیہی علاقوں میں سالانہ بنیادوں پر چکن60.76فیصد اور انڈے49.7مہنگے ہوئے ہیں جبکہ آٹا26.02فیصد مہنگا ہوا ہے۔ دیہی علاقوں میں گذشتہ ایک سال کے دوران 26.67فیصد اور چاول11.9فیصد مہنگے ہوئے ہیں۔ دیہی علاقوں میں پیاز ایک سال کے دوران 34.37، دال مونگ 18.79فیصد اور آلو12.4فیصد سستے ہوئے ہیں۔ادارہ شماریات کے مطابق کھانے پینے کی 13اشیاء میں اضافہ جبکہ پانچ میں کمی ریکارڈ کی گئی۔ گذشتہ سال مئی کے مقابلہ میں رواں سال مئی میں مہنگائی کی شرح میں تقریباً 11فیصد اضافہ ہوا۔

خبر پر آپ کی رائے

اپنا تبصرہ بھیجیں