0

بنوں میں مشران کی کوششوں سے قتل کی دشمنی دوستی میں تبدل ہوگئی

بنوں (مانند نیوز ڈیسک) مشران کی کوششوں سے قتل کی دشمنی دوستی میں تبدل ہو گئی فریقین ایک دوسرے کے ساتھ بغل گیر ہوگئے امیر خادم شاہ اور نور دار علی شاہ کے خاندان کے مابین قتل کی دشمنی مسلسل دو سال سے چلی آرہی تھی محمد نورخان,سابق ناظم طیب عباسی,نور تاز علی خان,شوکت,مولانا شہزداہ اور انم رحیم کی مسلسل سے دن رات کوششوں سے دونوں فریقین راضی نامے پر تیار ہوگئے اس سلسلے میں علاقہ بھرتی مچن خیل میں جرگہ منعقد ہوا اس موقع پر ملک روفیل خا ن مغل خان بھی موجود تھے امیر خادم خاندان نے مشران،علماء کرام اور علاقہ مکینوں کے ہمراہ نور دار علی شاہ کے خاندان کو ننواتے کی اور جرگے نے ستر لاکھ روپے,ایک بڑا جانور اور دس دھمبے پیش کئے امیر خادم شاہ خاندان نے مشورے کے بعد جرگے کو 70لاکھ روپے میں سے27لاکھ روپے اور تین دھمبے معاف کئے دونوں فریقین نے رضا مندی کا اظہار کرتے ہوئے قرآن مجید پر ہاتھ رکھ کر آئندہ کیلئے بھائی بھائی بننے کا عہد کیا اور ایک دوسرے کے ساتھ بغل گیر ہوگئے دونوں فریقین نے عزم کیا کہ آئندہ ہم پہلے کی طرح بھائیوں کی طرح زندگی بسر کریں گے کیونکہ لڑائی و جنگ میں خیر نہیں آخر میں مسجد امام نے قرآن و احادیث کا حوالہ دے کر محبت دینے کا درس دیا اور اجتماعی دعاکی گئی۔

خبر پر آپ کی رائے

اپنا تبصرہ بھیجیں