0

جمرو د میں دوخاندانوں کی انگریز دور سے چلنے والی دشمنی دوستی میں بدل گئی

جمرود (مانند نیوز ڈیسک) اس سلسلے میں جمرود کے علاقے نئی ابادی میں ملک اسرار شیر خیل کے حجرے میں شیر خان خیل کے دو خاندانوں ملک امین خان شیر خان خیل(ملک آباد) خاندان اور علی مان شاہ شیر خان خیل (ملک اسرار)خاندان کا مصلحتی جرگہ منعقد ہوا جس میں کوکی خیل،ملاگوری اور زخہ خیل قبیلوں سے تعلق رکھنے والے مشران و کشران نے کثیر تعداد میں شرکت کی۔دونوں خاندانوں کے مشران و کشران نے ایک دوسرے کے ساتھ رابطہ کیا اور خود ایک دوسرے کے حجرے گئے ننواتے کی اور عام معافی کرکے ایک دوسرے کے ساتھ بغلگیر ہوگئے اور آئندہ ایک خاندان جیسے زندگی گزارنے کا عزم کیا۔واضح رہے کہ مزکورہ تنازعہ ایک صدی سے چلا آ رہاتھاجو مشرانے یعنی ملکی پر بن گیا تھا جس میں کئی افراد جاں بحق و زخمی ہوچکے تھے۔مصلحتی جرگہ میں ملک میراسلم خان آفریدی،ملک اسرار کوکی خیل، ملک معاز آفریدی،ملک فیض اللہ جان کوکی خیل،ملک عبدالظاہر،ملک محمد اللہ افریدی،ملک فضل کریم،اسد ایڈووکیٹ،ملک منان،ملک شجاع آفریدی، ملک وزیر شیر خان خیل،ملک سرفراز زوراخیل،ملک تیمور، ملاگوری،ملک عبدلرازق زخہ خیل،ملک بریال افریدی،حضرت ولی،ایم پی اے الحاج بلاول افریدی،ملک حاجی عابد افریدی،ملک حاجی تیمور،ملک خالد اکبر،حاجی بارک طورخیل،ملک نصیب طور خیل و دیگر نے کثیر تعداد میں شرکت کی۔جرگہ سے مشران نے کہا کہ شیر خان خیل کے دو خاندانوں کے مابین عرصہ دراز سے دشمنی چلی آرہی تھی جو حالیہ دور میں اراضی تنازعہ پر شدتِ اختیار کی تھی جس میں دو افراد زخمی بھی ہوگئے تھے تاہم دونوں خاندانوں کے مشران و کشران نے مل بیٹھ کر دشمنی کا خاتمہ کرکے دوستی میں بدل دی۔انہوں نے کہا کہ قبائلی روایات میں جرگہ کا ایک اہم مقام ہے جس سے قبائلی عوام اپنے تنازعات،مسائل خوش اسلوبی سے حل کرتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ قبائلی علاقوں میں جتنے بھی تنازعات ہے ان کا حل صرف روایتی جرگہ ہے۔انہوں نے کہا کہ قبائلی ضلع خیبر جمرود میں جیتنے بھی اراضی تنازعات ہیں ان کو جرگہ کے ذریعے حل کریں گے کیوں کہ ان تنازعات کی وجہ سے بہت سے قبیلوں کے جانی و مالی نقصانات ہورہے ہیں ان کو بھی جرگہ کونسل کے ذریعے حل نکالے گے۔

خبر پر آپ کی رائے

اپنا تبصرہ بھیجیں