0

پیپلزپارٹی کا مولانا فضل الرحمان کو 10 سوالوں کے جوابات کا چیلنج

اسلام آباد (مانند نیوز ڈیسک )پاکستان پیپلزپارٹی نے سربراہ پی ڈی ایم مولانا فضل الرحمان کو 10 سوالوں کے جواب دینے کا چیلنج کردیا  پی ڈی ایم  کو استعمال کرکے ٹھیکوں کے حصول تعمیراتی بلز کے اجرا کی کوششیں کیوں کی؟۔پارٹی کے  کے سیکریٹری اطلاعات فیصل کریم کنڈی نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ مولانا فضل الرحمان میں اگر اخلاقی جرات ہے تو ان سوالات کا جواب دینے کے لئے کسی بھی پلیٹ فارم پر آجائیں۔کھلا چیلنج ہے۔سولات یہ ہیں کہ مولانا فضل الرحمان صاحب بتائیں کہ دو سال پہلے زرداری ہاؤس میں ہونے والی افطار پارٹی میں تاخیر سے کیوں آئے؟ فیصل کریم کنڈی  نے  سوال کیا ہے کہ مولانا فضل الرحمان صاحب بتائیں کہ وہ کون لوگ تھے کہ جن سے ملاقات کی وجہ سے آپ افطار پارٹی میں تاخیر سے آئے؟مولانا فضل الرحمان صاحب بتائیں کہ آزادی مارچ کو کس کے کہنے پر اور کس معاہدے کے تحت ختم کیا؟ مولانا فضل الرحمان صاحب آزادی مارچ کے خاتمے کی شرائط کو عوام کے سامنے کیوں نہیں لاتے؟ مولانا فضل الرحمان صاحب بتائیں کہ استعفوں کا معاملہ بیچ میں لاکر آپ نے لانگ مارچ کو کیوں اور کس کے کہنے پر رکوایا؟مولانا فضل الرحمان صاحب بتائیں کہ پی ڈی ایم کے پلیٹ فارم سے آپ نے سندھ حکومت سے کیوں ڈی سی اور ایس پی کو لگوانے کی فرمائشیں کیں؟ مولانا فضل الرحمان صاحب بتائیں کہ پی ڈی ایم کے پلیٹ فارم کو استعمال کرکے آپ نے ٹھیکوں کے حصول اور تعمیراتی بلوں کے اجرا کی کوششیں کیوں کی؟ مولانا فضل الرحمان صاحب بتائیں کہ سندھ میں پی ٹی آئی کے ساتھ اتحاد کرکے وفاق میں پی ٹی آئی کے خلاف جدوجہد کیا دوہری پالیسی نہیں؟ مولانا فضل الرحمان صاحب بتائیں کہ پی ٹی آئی کو چھوڑ کر آپ نے  پیپلزپارٹی کو کس کے کہنے پر نشانہ بنانا شروع کیا؟ مولانا فضل الرحمان صاحب بتائیں کہ آپ نے استعفوں کا جو اعلان کیا تھا، اس پر ابھی تک عمل درآمد کیوں نہیں ہوا؟

خبر پر آپ کی رائے

اپنا تبصرہ بھیجیں