0

پولیو جیسے موذی مرض سے بچوں کو بچا کر آنے والے نسلوں کو محفوظ بنایا جاسکتا ہے، کمشنر بنوں ڈویژن

بنوں (مانند نیوز ڈیسک) کمشنر بنوں ڈویژن شوکت علی یوسفزئی نے کہا ہے کہ انسداد پولیو مہم ایک قومی فریضہ ہے جس کے اہداف کے حصول کو ممکن بنانے کیلئے تمام دستیاب وسائل بروئے کار لائے جا رہے ہیں جس کا اعتراف صوبائی سطح کے اجلاسوں میں بھی کیا گیا ہے۔یہی وجہ ہے کہ اللہ کی مہربانی سے بنوں ڈویژن میں کافی عرصہ سے پولیو کیس رپورٹ نہیں ہوا۔انہوں نے کہا کہ پولیو جیسے موذی مرض سے بچوں کو بچا کر آنے والے نسلوں کو محفوظ بنایا جاسکتا ہے۔ اس مقصد کے حصول کیلئے آج 21 اکتوبر سے 26 اکتوبر 2021 تک پولیو مہم کو ہر صورت کامیاب بنایا جائے گا۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے آج اپنے دفتر میں ڈویژنل ٹاسک فورس برائے انسداد پولیو کے منعقدہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر ڈپٹی کمشنر بنوں محمد زبیر خان نیازی، ڈپٹی کمشنر شمالی وزیرستان شاہد علی خان ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر بنوں عمران شاہد، ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر لکی مروت عمران خان،ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر شمالی وزیرستان شعبہ صحت کے حکام، پاک آرمی کے متعلقہ افسران اور دیگر محکموں کے افسران موجود تھے۔جبکہ ڈپٹی کمشنر لکی مروت نے بذریعہ ویڈیو لنک اجلاس میں شرکت کی۔اس موقع پر کمشنر بنوں ڈویژن شوکت علی یوسفزئی نے کہا کہ انسداد پولیو مہم ایک قومی فریضہ ہیاور بنوں ڈویژن کو اس موذی مرض سے پاک کیا جائے گا اورانسداد پولیو کے اہداف کا حصول اور اس کے راستے میں ہر رکاوٹ ختم کرنا ناگزیر ہوگیا ہے۔ جن میں پولیو ورکرز کے تعداد کو بڑھانا اور سیکیورٹی صورتحال کو مضبوط بنانا ہے تاکہ ہر بچے کو قطرے پلا کر پولیو وائرس کو جڑ سے اکھاڑا جا سکے۔اجلاس میں ضلع بنوں، لکی مروت اور شمالی وزیرستان کے متعلقہ پولیو افسران نے اجلاس کو تفصیلی بریفنگ دی۔ جس میں کامیابیوں کے حصول پر انہوں نے پولیو افسران کے جاری کاوشوں کو سراہا۔اور کہا کہ وہ آئندہ طے شدہ اہداف کی تکمیل تک تمام صلاحیتوں کو بروئے کار لائیں۔ کمشنر بنوں ڈویژن نے زور دیتے ہوئے کہا کہ سیکورٹی اداروں کی جانب سے پولیو مہم میں حصہ لینے والے کارکنان کو تحفظ فراہم کرنا اولین ترجیح ہے۔اس کے علاؤہ ضلعی انتظامیہ انسداد پولیو مہم میں حصہ لینے والے ٹیموں کے تمام ضروریات اور جائز مطالبات پورا کریگی۔

خبر پر آپ کی رائے

اپنا تبصرہ بھیجیں