0

بٹ خیلہ، 11 سال گزرنے کے باوجود بھائ کے قاتل گرفتار نہ ھوۓ، شمال خان والد جمشید خان

ملاکنڈ (مانند نیوز ڈیسک) بٹ خیلہ مدے خیل کے رھائیشی شمال خان والد جمشید خان نے کھا ہے کہ 11 سال گزرنے کے باوجود بھائ کے قاتل گرفتار نہ ھوۓ مجھ پر 3 بار قاتلانہ حملے ھوۓ اغوا کے ڈر سے بچوں کوسکول سے نکالا مجھے انصاف اور تحفظ دیا جاۓ ورنہ بٹ خیلہ عدالت کے سامنے بچوں سمیت خود کشی کرونگا ملاکنڈ پریس کلب بٹ خیلہ میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ھوۓ شمال خان نے کھا کہ 11 سال قبل میرے بڑے بھائ حضرت سید کو قتل کیاگیاتھا جس کا رپورٹ مقامی تھانہ میں درج ھے تاھم جب میں اس بارے میں اواز اٹھاتا ھو تو مجھ پر قاتلانہ حملہ ھوتاھے اور ایک حملے میں مجھ پر شدید تششدکیا گیا اور ،15گھنٹے تک ھسپتال میں بے ھوش پڑا رھا اس طرح بچوں کی بچوں اغوا کی کوشش بھی ھوۓ جس کی وجہ سے ان کو۔سکول سے نکالا اور مقامی لیویز چوکی بٹ خیلہ میں رپورٹ درج کیاگیا تاھم اب تک کچھ داد رسی نہ ھوۓ اور اب بھی میر جان کو خطرہ ھے انھوں نے وزیراعلی چیف جیسٹس پشاور ھائ کورٹ ڈپٹی کمشنر ملاکنڈ سے فوری انصاف اور تحفظ کا مطالبہ کیا ورنہ حالات سے تنگ ھوکر بچوں سمیت بٹ خیلہ عدالت کے سامنے خودکشی کرونگا جس کے ذمہ دار حکومت وقت اور ملاکنڈ انتظامیہ ھوگی

خبر پر آپ کی رائے

اپنا تبصرہ بھیجیں