0

سوات، ہیلپنگ ہینڈز کی طرف سے 300 بیوہ خاندانوں میں ریلیف پیکیجز کی تقسیم

سوات (مانند نیوز ڈیسک) ہیلپنگ ہینڈز کی طرف سے 300 بیوہ خاندانوں میں ریلیف پیکیجز کی تقسیم۔یتیم بے سہارا بچوں کے چہروں پر خوشی کی لہر۔علاقہ کی عوام کی طرف ہیلپنگ ہینڈز کی کاوشوں کو سراہاگیا۔کبل دیولئی کے مقام پرایک روزہ مال آف ہیومینیٹی (Mall of Humanity)کا قیام۔مال کا افتتاح سابق تحصیل ناظم حاجی رحمت علی نے کیا۔ہیلپنگ ہینڈزکے مشران کی بھی خصوصی شرکت۔تفصیلات کے مطابق سوات کی تحصیل کبل کے علاقہ دیولئی مسلم کمیونٹی یو ایس اے کے تعاؤن سے ایک روزہ مال آف ہیومینیٹی کا قیام عمل میں لایاگیا۔اس مال میں یتیم بچوں اور بیوہ خواتین میں کپڑے، سوٹ، پینٹ شرٹ،گرم ملبوسات، تحائف اور کھلونے تقسیم کئے گئے۔اس موقع پر سابق تحصیل ناظم حاجی رحمت علی نے افتتاح کیااور ہیلپنگ ہینڈز کی کاوشوں کو سراہا جبکہ مسلم کمیونٹی آف یو ایس اے کے تعاؤن کا بھرپور انداز میں شکریہ ادا کیا اور کہاکہ مسلم کمیونٹی یو ایس اے ہر مشکل وقت میں غریب، نادار، مسکین، یتیم اور بیواؤں کے ساتھ ہر مشکل گھڑی میں ان کے شانہ بہ شانہ کھڑی رہتی ہے۔انہوں نے مزید کہاکہ ہیلپنگ ہینڈز کی امدادی سرگرمیاں کسی سے پوشیدہ نہیں۔وہ بھی ہر مشکل وقت میں اپنی امدادی سرگرمیاں جاری رکھتے ہوئے حقداروں کو ان کا حق پہنچانے اور ان کا سہارا بننے میں کوئی کسر نہیں چھوڑتے۔اسی طرح مسلم کمیونٹی اور ہیلپنگ ہیندزسے امدادی سرگرمیاں آئندہ بھی جاری رکھنے کی بھرپور توقع رکھتے ہیں۔ اس موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے خیبرپختونخوا کے ریجنل مینیجرامین اللہ نے کہاکہ مسلم کمیونٹی یو ایس اے اور ہیلپنگ ہینڈز کی بھرپور کوشش ہے کہ وہ اپنی امدادی سرگرمیاں جاری رکھیں گے تاکہ معاشرہ میں کوئی یتیم اور بیوہ حق سے محروم نہ رہ سکے۔اس موقع پر ہیلپنگ ہینڈز کے مشران ارشد خان، شوکت علی اور آفتاب علی بھی موجود تھے۔

خبر پر آپ کی رائے

اپنا تبصرہ بھیجیں