0

کمشنر ملاکنڈکاسوشل میڈیا ایکٹیویسٹ محمد زادہ آگراوال کے قبر پر آمد

ملاکنڈ ( ) کمشنر ملاکنڈ ڈویژن سید ظہیر الاسلام نے وزیر اعلی خیبر پختونخوا محمود خان کے خصوصی ہدایت پر گذشتہ روز قتل ہونے والے معروف سوشل میڈیا ایکٹیویسٹ محمد زادہ آگرہ کے قبر پر آمد کے موقع پر وزیر اعلی کی جانب سے شہید کے قبر پر پھولوں کی چادر چڑھائی اور دعا کی۔ اس موقع پر ڈپٹی کمشنر ملاکنڈ انوار الحق اسسٹنٹ کمشنر درگئی معظم خان ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنر وحید اللہ خان سمیت دیگر اعلیٰ حکام اور شہید محمد زادہ آگرہ کے والد بھی ان کے ہمراہ تھے۔اس موقع پر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کمشنر ملاکنڈ ڈویژن سید ظہیر الاسلام نے معروف سوشل میڈیا ایکٹیویسٹ محمد زادہ آگرہ کے خدمات کو سراہا اور کہا کہ شہید محمد زادہ آگرہ کامنشیات کے خلاف شروع کردہ مشن پایہ تکمیل تک پہنچانے کے لئے ملاکنڈ لیویز میں اینٹی نارکوٹکس سکواڈ قائم کیا جارہا ہے کیونکہ محمد زادہ آگرہ صرف اس کے خاندان یا سخاکوٹ کے عوام کے نہیں بلکہ ہم سب کا قومی ہیرو تھے جس پر ہم فخر کرتے ہے اور یقین دلاتے ہیں کہ شہید محمد زادہ آگرہ کے خون اور خاندان کو انصاف ضرور ملے گا۔انہوں نے کہا کہ محمد زادہ شہید کے قاتل اسلحہ اور واقعے میں استعمال ہونے والے موٹر سائیکل سمیت گرفتار کر لئے گئے ہیں جو سزا سے نہیں بچ سکتے بلکہ ہماری بھرپور کوشش ہے کہ اس جُرم کے پیچھے عناصر کو بھی کیفر کردارتک پہنچائیں۔انہوں نے کہا کہ منشیات فروشوں سمیت دیگر جرائم میں ملوث آفراد کے خلاف آپریشن شروع کیا گیا ہے جس کے دوران درجنوں منشیات فروش گرفتار کرکے جیل بھیج دئیے گئے ہیں جبکہ کچھ منشیات فروش علاقہ چھوڑ کر فرار ہو چکے ہیں اور قریبی اضلاع میں پناہ لی ہے جن کو ٹریس کرکے گرفتار کرینگے۔ انہوں نے کہا کہ محمد زادہ آگرہ نے قوم کے بچوں کو نشے جیسے لعنت سے بچانے کے لئے جان کی قربانی دی ہے اور پوری قوم کو اپنے ایسے ہیروز پر فخر ہے اور ہم یقین دلاتے ہیں کہ محمد زادہ آگرہ کے منشیات جیسے لعنت کے خلاف شروع کردہ مہم کو پایہ تکمیل تک پہنچاتے ہوئے اصل گینگ کے جڑوں تک پہنچ کرکیفر کردار تک پہنچائینگے انہوں نے کہا کہ جرائم پیشہ عناصر کیساتھ تعلقات رکھنے اور غیر قانونی سرگرمیوں میں ملوث سرکاری اہلکاروں کے خلاف بھی تحقیقات کئے جار ہے ہیں اور جو بھی سرکاری اہلکار ملوث پایا گیا تو انکے خلاف سخت ایکشن لیا جائیگا

خبر پر آپ کی رائے

اپنا تبصرہ بھیجیں