0

مینگورہ بائی پاس فلائی اوور پر کام کی پیشرفت تسلی بخش ہے، منصوبہ وقت سے پہلے مکمل کرلیا جائے گا، فضل حکیم

سوات (مانند نیوز ڈیسک) چیئرمین ڈیڈیک فضل حکیم خان یوسفزئی کا کہنا ہے کہ مینگورہ میں ٹریفک کی روانی کے لئے بائی پاس فلائی اوور منصوبہ نہایت اہمیت کا حامل ہے، منصوبے کی تکمیل سے ٹریفک کے مسائل میں کمی آئے گی اور آمدورفت میں آسانیاں پیدا ہونگی، فلائی اوور مینگورہ شہر کے لئے اس نوعیت کا پہلا منصوبہ ہے اور کام پر ٹائم لائن کے مطابق پیشرفت ہورہی ہے جو کہ تسلی بخش ہے، ان خیالات کا اظہار انہوں نے مینگورہ بائی پاس فلائی اوور پر کام کا جائزہ لیتے ہوئے کیا۔ چئیرمین ڈیڈیک سوات فضل حکیم خان یوسفزئی نے پختونخوا ہائی وے اتھارٹی حکام کے ہمراہ پروجیکٹ سائٹ کا معائنہ کیا اور کام کا جائزہ لیا۔ اس موقع پر مینیجنگ ڈائریکٹر عامر درانی، ڈائریکٹر سہیل ادریس، ڈپٹی ڈائریکٹر عدنان خان، کنٹریکٹر خواجہ خان و دیگر موجود تھے۔ پی ایچ اے حکام کی جانب سے چیئرمین ڈیڈیک کو تفصیلی بریفنگ بھی دی گئی۔ سائٹ اور کام کا معائنہ کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ فلائی اوور کا منصوبہ ٹریفک کی روانی میں حائل روکاوٹوں کو سامنے رکھتے ہوئے شروع کیا گیا تھا جس پر پیشرفت تسلی بخش ہے اور منصوبے کو وقت مقررہ سے پہلے تکمیل تک پہنچانے کے لئے تیزی سے کام ہورہا ہے۔ بریفنگ میں بتایا گیا کہ منصوبہ اگلے سال جون تک مکمل ہونا ہے جس پر تیزی سے کام جاری ہے اور امید ہے کہ وقت سے پہلے فلائی اوور ٹریفک کے لئے کھول دیا جائے۔ بریفنگ میں بتایا گیا کہ فلائی اوور کی مجموعی لمبائی 480 میٹر ہے جو کہ 746.254 ملین روپے کی لاگت سے مکمل ہوگا۔ فلائی اوور کی تعمیر سے کانجو اور مینگورہ کے درمیان آمدورفت، مینگورہ بائی پاس میں ٹریفک کی روانی اور مینگورہ شہر کو آنے اور جانے میں آسانیاں پیدا ہونگی۔

خبر پر آپ کی رائے

اپنا تبصرہ بھیجیں