0

جانی خیل قوم کےلئے دو ارب روپے کی ترقیاتی پیکج کی باقاعدہ منظوری

میرانشاہ (زین اللہ خان)
کمشنر بنوں ڈویژن شوکت علی یوسفزئی نے کہا ہے کہ وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان کی ذاتی دلچسپی سے جانی خیل قوم کےلئے دو ارب روپے کی ترقیاتی پیکج کی باقاعدہ منظوری ایک اہم سنگ میل ثابت ہوگی۔اس اقدام کی منظوری گزشتہ روز ایڈیشنل چیف سیکریٹری شہاب علی شاہ کی زیر صدارت صوبائی ترقیاتی ورکنگ پارٹی کے اجلاس میں دی گئی جس سے اس علاقے کی پسماندگی اور محرومیوں کا ازالہ ہو جائے گا۔ کمشنر بنوں نے کہا کہ ہماری کوشش ہوگی کہ منظور شدہ پیکج کو مختصر وقت میں پایہ تکمیل تک پہنچایا جائے۔ جس کیلئے جانی خیل قوم کا تعاون بھی ضروری امر ہوگا تاکہ علاقے میں خوشحالی کا نیا دور شروع ہوجائے ۔
ان خیالات کا اظہار انہوں نے آج اپنے دفتر سے جاری کردہ ایک بیان میں کیا۔
کمشنر بنوں ڈویژن شوکت علی یوسفزئی نے وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان کی وعدے کے مطابق منظور کئے گئے پیکج کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ اس ترقیاتی پیکج کے تحت 12 سڑکوں اور پلوں کی تعمیر کے منصوبوں میں جانی خیل منڈی سے پویا روڈ، جانی خیل قلعے سے جانی خیل سپورٹس اسٹیڈیم تک روڈ کی تعمیر، لالہ کلی روڈ کی مروت کنال سے گاؤں لالہ کلی، سپینہ تگہ پل سے قلعہ نالہ پل، علی خیل مدرسہ زندی خیل سے زندی خیل چوک، مالی خیل قبرستان روڈ، سنگاری روڈ، نورنگ خیل تودہ نر روڈ، بچکئ کلی روڈ اور آرام خیل روڈ، ہندی خیل کنال پل سے گاؤں شگئی علی خیل، سپینہ تگہ چینل پر پل کی تعمیر، ہندی خیل مارکیٹ کے اطراف نالے کی تعمیر شامل ہیں۔
جبکہ دیگر ترقیاتی پیکیج میں چار سکولوں کی اپ گریڈیشن، گورنمنٹ ٹیکنیکل کالج اور گورنمنٹ ڈگری کالج برائے طلبہ کا قیام، ایریگیشن کے تین منصوبوں، سولر ٹیوب ویل اور پریشر پمپ کے 9 منصوبوں، جانی خیل میں وٹرنری اور ٹائپ ڈی ہسپتال،صحت کے سہولیات کی بہتری، جانی خیل کے لیے خصوصی بجلی کے فیڈر کے قیام کے منصوبے بھی شامل ہیں۔انہوں نے کہا کہ حکومت کی طرف سےجانی خیل کی ترقی کے لیے 2 ارب کے شکتو ڈیم پراجیکٹ، 5.2 کروڑ روپے سے ریسکیو 1122 اور تقریباً 10 کروڑ روپے کی بیوٹیفیکیشن کے دیگر منصوبے پہلے ہی منظور کئے جاچکے ہیں۔ یاد رہے کہ اس سال گزشتہ جولائی میں وزیر اعلی محمود خان نے جانی خیل کے عمائدین کے ایک جرگے سےملاقات کے دوران خطاب کرتے ہوئے جانی خیل کے لئے دو ارب روپے کے خصوصی ترقیاتی پیکج کے علاؤہ جانی خیل میں شکتو ڈیم کی تعمیر کے لئے دو ارب روپے کا الگ اعلان کیا تھا۔

خبر پر آپ کی رائے

اپنا تبصرہ بھیجیں