0

سندھ کا بجٹ منگل کو صوبائی اسمبلی میں پیش کیا جائیگا

کراچی (مانند نیوز ڈیسک) سندھ کا مالی سال 2023-2022 کا بجٹ وزیر اعلی سندھ مراد علی شاہ (آج) منگل کو سندھ اسمبلی میں پیش کریں گے، بجٹ میں کوئی اضافی ٹیکس نہ لگائے جانے کا امکان ہے۔نجی ٹی وی کے مطابق صوبے کے نئے مالی سال کے بجٹ کا کل حجم 1600 ارب روپے سے زائد ہو گا، سالانہ ترقیاتی سکیموں کیلئے 320 ارب روپے سے زائد مختص کرنے کی تجویز ہے۔ امن و امان کے حوالے سے مختص رقم میں اضافے کی تجویز سامنے رکھی گئی جبکہ کراچی شہر کیلئے 250 مزید بسوں کی خریداری کے لئے رقم مختص کی جائے گی۔ سندھ کے نئے بجٹ میں کوئی اضافی ٹیکس نہیں لگایا جائے گا، سندھ کے ڈویژنل ہیڈ کوارٹرز میں سائنس میوزیم قائم کرنے کی بھی تجویز ہے، سیف سٹی منصوبہ اور فرانزک لیبارٹری کیلئے رقم مختص کی جائے گی۔سندھ کے بجٹ میں انفارمیشن سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کے شعبے میں خاطر خواہ اضافے کا امکان ہے۔اس کے علاوہ ریڈ لائن اور دیگر بی آر ٹی منصوبوں کے لئے رقم مختص کی جائے گی۔واضح رہے کہ سندھ کابینہ(آج) منگل کو صبح بجٹ تجاویز کی منظوری دے گی۔

خبر پر آپ کی رائے

اپنا تبصرہ بھیجیں