0

ٹی ایم او بابوزئی کا خواتین اور بچوں کے لئے مختص شہداء پارک سیدو شریف کا دورہ، تفریحی سہولیات کا جائزہ لیا

سوات (مانند نیوز ڈیسک) تحصیل میونسپل آفیسر بابوزئی علی رضا نے سیدو شریف سوات کی کالج کالونی میں واقع تاریخی شہداء پارک کا اچانک دورہ کیا اور اس میں خواتین اور بچوں کی تفریح کیلئے دستیاب سہولیات کا جائزہ لیا۔ خواتین اور بچوں کے لئے مختص شہداء پارک سیدو شریف چھتیس ہزار چھ سو گز رقبے پر پھیلا یہ قدیمی پارک قیام پاکستان سے پہلے والئی ریاست میاں گل جہانزیب نے تعمیر کروایا تھا جس میں سینکڑوں کی تعداد میں چیڑ، دیار اور دیگر آرائشی و پھلدار درختوں کے علاؤہ جیومیٹرک انداز میں سبزہ جات اور مختلف اقسام کے پھولوں کی کیاریاں بنائی گئی ہیں جبکہ اس دور کے جھولے، آہنی و چوبی بنچز اور بارہ دریاں بھی بدستور اصل حالت میں موجود ہیں اور اس دور کی عظمت رفتہ کی یاد تازہ کرتے ہیں۔ تحصیل میونسپل آفیسر نے اس موقع پر متعلقہ اہلکاروں کو پارک میں تفریحی اور خورد و نوش کی سہولیات مزید بہتر بنانے کی ہدایت کی۔ وہ پارک میں موجود بچوں اور انکے والدین سے بھی ملے اور پارک کی خوبصورتی اور تفریحی سہولیات میں اضافے سے متعلق انکی تجاویز سے لیں جبکہ بچوں اور خواتین نے اس خوبصورت و تاریخی پارک کی بہتر دیکھ بھال پر ٹی ایم اے بابوزئی انتظامیہ کا شکریہ ادا کیا۔ علی رضا کا کہنا تھا کہ سوات ایشیا کا سویٹزرلینڈ ہے۔ وزیراعلی سوات بھر میں تفریحی اور سیاحتی سہولیات بڑھانے میں گہری دلچسپی لے رہے ہیں تاکہ اسے مقامی لوگوں کے علاؤہ غیر ملکی سیاحوں کیلئے پرکشش بنایا جائے۔ انہوں نے کہا کہ ٹی ایم اے بابوزئی سیدو شریف اور منگورہ کے علاؤہ دریائے سوات کنارے تفریحی سہولیات بڑھانے میں کلیدی کردار ادا کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ شہداء پارک کی خوبصورتی ہمارے اہداف میں شامل ہے۔ علی رضا کا مزید کہنا تھا کہ سیدو شریف میں پانی کی گرتی ہوئی سطح اور کمیابی کے پیش نظر پارک میں آبپاشی اور سٹریٹ لائٹس کا نظام شمسی توانائی سے چلانے کیلئے جامع منصوبہ شروع کیا جا رہا ہے جس کیلئے عنقریب مطلوبہ وسائل بھی مہیا کر دئیے جائیں گے انہوں نے پارک کے در و دیوار، جھولوں، بنچز، کینٹین اور دیگر تعمیرات کو آرائشی رنگ ع روغن سے مزید خوبصورت بنانے کی ہدایت بھی کی۔

خبر پر آپ کی رائے

اپنا تبصرہ بھیجیں