0

دیر، سوات، بونیر اور شانگلہ کے پہاڑ طالبان سے بھر گئےہیں،سابق سینیٹر زاہد خان

لوئر دیر (مانند نیوز ڈیسک) عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی ترجمان زاہد خان نے کہا ہے کہ خیبرپختونخوا میں امن و امان کی صورتحال بدتر ہوتی جارہی ہے، لیکن حکومت بے حرکت ہے۔پیر کو یہاں ڈان سے فون پر گفتگو کرتے ہوئے، انہوں نے کہا کہ دیر، سوات، بونیر اور شانگلہ کے پہاڑ ایک بار پھر تخریب کاری کی کارروائیوں کے لیے شدت پسندوں سے بھر گئے ہیں۔اے این پی رہنما نے الزام لگایا کہ خیبرپختونخوا میں حکمران جماعت طالبان کی حمایت کرتی ہے۔انہوں نے دعویٰ کیا کہ دیر اور دیگر اضلاع کے پہاڑی علاقوں میں لوگوں کو پہاڑوں میں چھپے عناصر کی جانب سے بھتہ کی کالیں موصول ہو رہی ہیں۔ اے این پی کے سابق سینیٹر نے کہا کہ جب پی ٹی آئی کے ایم پی اے ملک لیاقت نے بھتہ دینے سے انکار کیا تو ان پر حملہ کیا گیا۔

خبر پر آپ کی رائے

اپنا تبصرہ بھیجیں