0

پاکستان میں اس وقت 2لاکھ 70ہزار افراد ایچ آئی وی سے متاثر ہیں‘ ڈاکٹر امجد محبوب

پشاور(پریس ریلیز)محکمہ صحت خیبرپختونخوا اور یونیسف کے تعاون سے صوابی کے تدریسی ہسپتا ل باچاخان میڈیکل کمپلیکس میں ایچ آئی وی ایڈز فیملی سینٹر کا افتتاح کردیا۔ افتتاحی تقریب باچاخان میڈیکل کمپلیکس میں منعقد ہوئی، عالمی تنظیم ادارہ یونیسف ہیلتھ ٹیم لیڈر ڈاکٹر انعام اللہ نے باقاعدہ افتتاح کیا، ہسپتال ڈائیریکٹر ڈاکٹر امجد محبوب نے مہمانوں کو ایچ آئی وی سینٹر سے متعلق بریفگ دی اور صوابی میں ایچ آئی وی، ہیپاٹائٹس اور تھلیسمیاکے مرض کے حوالے سے آگاہ کیا۔اس موقع پریونسیف ہیلتھ ٹیم لیڈر نے میڈیا سے گفتگو میں صوابی میں ایچ آئی وی کے تدارک اور علاج کے یونٹ کے قیام پر محکمہ صحت اور باچاخان میڈیکل کمپلیکس انتظامیہ کا شکریہ ادا کیا، انہوں نے میڈیا کو بتایا کہ پاکستان میں اس وقت 2لاکھ 70ہزار افراد ایچ آئی وی سے متاثرہ ہیں جن میں صرف 13فیصد متاثرین اپنا علاج کرا رہے ہیں یہی وجہ ہے کہ پاکستان میں یہ مرض بڑھتا جارہا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ ایچ آئی وی کے روک تھام کے لئے ہرسطح پر ایک مربوط نظام کی ضرورت ہے۔اس موقع پر ہسپتال ڈائریکٹر ڈاکٹر امجد محبوب نے میڈیا کو بتایا کہ بد قسمتی سے ایچ آئی وی کے حوالے معاشرے میں اگاہی نہ ہونے کے برابر ہے اس مرض کے حوالے سے عوام میں شعور اجاگر کرنے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے بتایا کہ اس وقت ضلع صوابی میں ایچ آئی وی سے متاثرہ افراد کی تعداد 240تک پہنچ گئی ہے۔ ہسپتال ڈائریکٹر نے بتایا کہ اس سینٹر میں عوام کو اسکریننگ سے لے کر علاج تک کی تمام سہولت بلکل مفت مہیا کی جارہی ہیں۔ پراجیکٹ ڈائریکٹرڈاکٹر طارق حیات کے مطابق 2015سے لے کر اب تک صوبے میں اس مرض سے متاثرہ افراد کی تعداد 6ہزار سے تجاوز کرگئی ہے جبکہ گزشتہ کچھ عرصے سے زیادہ کیسز رپورٹ ہورہے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ عالمی اداروں کے مسلسل تعاون سے 7نئے سینٹر قائم کئے گئے ہیں جس سے مجموعی تعداد 13ہوگئی، انہوں نے عوام سے اپیل کی وہ آئیں اور اپنی اسکریننگ کرائیں ہسپتال ترجمان کے مطابق باچاخان میڈیکل کمپلیکس کا ایچ آئی وی سینٹر جدید لیبارٹری، ایگزامنشین رومز، اور فیملی کئیر سینٹر پر مشتمل ہے اور سینٹر سے ابھی تک 200سے زائد مریضوں نے رجوع کیا ہے۔

Share and Enjoy !

Shares

اپنا تبصرہ بھیجیں