0

پنجاب آئل ملز کی آمدنی میں اضافہ ہوالیکن منافع میں کمی ہوئی،ویلتھ پاک

اسلام آباد(مانند نیوز)پنجاب آئل ملز لمیٹڈ نے 30 جون 2023 کو ختم ہونے والے مالی سال کے لیے اپنے مالیاتی نتائج کا اعلان کر دیاجو کہ گزشتہ میں ریکارڈ کیے گئے 8.83 بلین روپے کے مقابلے میں خالص فروخت میں 11.4 فیصد اضافے کے ساتھ 9.84 ارب روپے ہو گئی۔
کمپنی نے اس اضافے کو خام مال کی بلند قیمتوں اور کرنسی کی قدر میں کمی کی وجہ سے فروخت کے عمل میں اضافے کو قرار دیا۔کمپنی نے مالی سال 23 میں 921.33 ملین روپے کا مجموعی منافع کمایا، مالی سال 22 میں 816.4 ملین روپے کے مقابلے میں 12.85 فیصد اضافہ ہوا۔
مجموعی مارجن مالی سال 22 میں 9.24 فیصد سے مالی سال 23 میں معمولی طور پر بڑھ کر 9.36 فیصد ہو گیا۔کمپنی نے فروخت اور تقسیمی اخراجات میں 0.76 فیصد اضافے کا بھی اعلان کیا۔ اسی طرح انتظامی اخراجات مالی سال 22 میں 243.56 ملین روپے سے مالی سال 23 میں 20.99 فیصد بڑھ کر 294.68 ملین روپے ہو گئے۔ اخراجات میں اضافہ توانائی کے بڑھتے ہوئے اخراجات کی وجہ سے ہوا۔کمپنی نے 261.94 ملین روپے کا آپریٹنگ منافع حاصل کیا، جو 210.89 ملین روپے سے 24.21 فیصد زیادہ تھا۔ تاہم، مالی سال 23 میں دیگر آمدنی میں 5.16 فیصد کمی ہوئی، جو 31.03 ملین روپے تک پہنچ گئی۔
ٹیکس سے پہلے کا منافع مالی سال 22 میں 181.20 ملین سے مالی سال 23 میں 15.82 فیصد کم ہو کر 152.53 ملین روپے ہو گیا۔پنجاب آئل ملز لمیٹڈ نے مالی سال 23 کے دوران 42.99 ملین روپے کا بعد از ٹیکس منافع رجسٹر کیا جبکہ مالی سال 22 کے دوران 67.3 ملین روپے کے خالص منافع کے مقابلے میں 36.1 فیصد کی کمی واقع ہوئی۔ لہذا، خالص منافع کا مارجن مالی سال 22 میں 0.76 فیصد سے کم ہو کر 0.44فیصد ہو گیا۔کمپنی نے مالی سال 22 میں 8.67 روپے کے مقابلے میں 5.54 روپے فی حصص آمدنی کی اطلاع دی۔ فروخت 2018 میں 4.95 بلین روپے سے بڑھ کر 2023 میں 9.84 بلین روپے ہوگئی۔ اس سے ظاہر ہوتا ہے کہ کمپنی نے وقت کے ساتھ ساتھ اپنی پیداوار کو بڑھایا۔
مجموعی منافع 2018 میں 739.6 ملین روپے سے 2023 میں 921.3 ملین روپے تک مختلف سالوں میں مختلف تھا۔2023 میں، کمپنی نے سب سے زیادہ 261.9 ملین روپے کا آپریٹنگ منافع اور 2021 میں سب سے کم 65.58 ملین روپے درج کیا۔ تاہم، خالص منافع 2018 میں 69.15 ملین روپے سے کم ہو کر 2023 میں 42.99 ملین روپے رہ گیا۔ 2019 میں 107.37 ملین روپے کا سب سے زیادہ خالص منافع، اور 2021 میں 16.96 ملین روپے کا خالص نقصان ہوا۔ پنجاب آئل ملز نے وقت کے ساتھ لیکویڈیٹی کی مستحکم پوزیشن برقرار رکھی کیونکہ اس کا موجودہ تناسب 1.2 سے اوپر رہا۔

Share and Enjoy !

Shares

اپنا تبصرہ بھیجیں