0

فارم 49 جاری ہونے کے بعد ووٹوں کے دوبارہ گنتی نہیں ہوسکتی،پشاورہائیکورٹ

پشاور(مانند نیوز ڈیسک)پشاور ہائیکورٹ نے صوبائی اسمبلی کے 8 حلقوں پر انتخابی نتائج کیخلاف درخواستوں پر سماعت کرتے ہوئے کہا ہے کہ رولز کے مطابق فارم 49 جاری ہونے کے بعد ووٹوں کے دوبارہ گنتی نہیں ہوسکتی۔پیر کو پشاور ہائیکورٹ میں صوبائی اسمبلی کے 8حلقوں پر انتخابی نتائج کیخلاف درخواستوں پر سماعت ہوئی، وکیل درخواست گزار نے عدالت کو بتایا کہ فارم45میں نتائج ہمارے حق میں تھے، فارم47میں تبدیل کردیئے گئے۔وکیل الیکشن کمیشن نے کہا کہ بیشتر حلقوں کے فارم49جاری کردیے گئے ہیں، انتخابی نتائج کی تیاری امیدواروں اور آبزرور کی موجودگی میں ہوتی ہے۔ یہ کیس قابل سماعت نہیں، الیکشن کمیشن اس میں حکم دے چکا ہے۔جسٹس ارشدعلی نے ریمارکس دیئے کہ رولز کے مطابق آپ کے کیس میں دوبارہ گنتی نہیں ہوسکتی، فارم49جاری ہونے کے بعد ہم کچھ نہیں کرسکتے، ہم الیکشن کمیشن کویہ تو نہیں کہہ سکتے گنتی دوبارہ کریں۔جسٹس ارشد علی نے کہا کہ سپریم کورٹ نے ان کیسز میں بڑا چھوٹا مارجن رکھا ہواہے، ان مقدمات میں ہائیکورٹ کا دائرہ اختیار بہت کم ہے، عدالت نے درخواست پر الیکشن کمیشن سے جواب طلب کرلیا۔ نتائج روکنے سے متعلق حکم امتناع کی استدعا پر بعد میں فیصلہ کیا جائے گا۔

Share and Enjoy !

Shares

اپنا تبصرہ بھیجیں