0

جنوبی افریقہ کو شکست، بھارت 17 سال بعد ٹی20 چیمپئن بن گیا

اسلام آباد(مانند نیوز)ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ 2024 کے فائنل میں بھارت نے سنسنی خیز مقابلے کے بعد جنوبی افریقہ کو شکست دے کر 17 سال بعد ٹائٹل جیت لیا۔ بھارت نے اسٹار بیٹر ویرات کوہلی کی عمدہ بیٹنگ کی بدولت جنوبی افریقہ کو جیت کے لیے 177 رنز کا ہدف دیا جس کے تعاقب میں جنوبی افریقی ٹیم 8 وکٹوں پر 169 رنز بناسکی۔ ویرات کوہلی پلیئر آف دی فائنل قرار پائے۔ہدف کے تعاقب میں پروٹیاز کی ابتدائی دو وکٹیں 12 رنز تک گر گئیں، ریزا ہینڈرکس اور کپتان ایڈن مارکرم 4، 4 رنز بنا کر پویلین لوٹ گئے۔ ہینڈرکس کو جسپریت بومرا اور ایڈن مارکرم کو آؤٹ کیا۔تیسری وکٹ پر ٹرٹن اسٹبز اور کوئنٹن ڈی کوک کے درمیان 58 رنز کی پارٹنرشپ بنی۔ اسٹبز 21 گیندوں پر 31 رنز بنا کر پویلین لوٹے۔ انہیں اکشر پٹیل نے آؤٹ کیا۔ویرات کوہلی کا ٹی20 انٹرنیشنلز سے ریٹائرمنٹ کا اعلان جنوبی افریقہ کو چوتھا نقصان کوئنٹن ڈی کوک کی صورت میں اٹھانا پڑا۔ کوک ارشدیپ سنگھ کی گیند پر چھکا لگانے کی کوشش میں کیچ آؤٹ ہوگئے۔ انہوں نے 39 رنز بنائے۔ اس کے بعد پانچویں وکٹ پر ہینرک کلاسین اور ڈیوڈ ملر نے برق رفتار بیٹنگ کرتے ہوئے میچ کو دلچسپ بنادیا۔ تاہم 27 گیندوں پر 52 رنز بنانے والے 151 کے مجموعے پر ہاردیک پانڈیا کی گیند پر کیپر کو کیچ دے بیٹھے۔ اسکے بعد جسپریت بومرا نے عمدہ بولنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے جنوبی افریقہ کا جیت کا خواب چنکا چور کردیا، اپنے اختتامی دو اوورز میں صرف 5 رنز دے کر بھارت کی میچ میں واپسی کروادی۔جنوبی افریقہ کو آخری اوور میں جیت کےلیے 16 رنز درکار تھے، لیکن جنوبی افریقی ٹیم فنشنگ لائنز عبور نہ کرسکی۔ویرات کوہلی بڑے میچ کے بڑے کھلاڑی ثابت ہوئے بھارت کی طرف سے ہاردیک پانڈیا نے 3 کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا، بومرا اور ارشدیپ نے دو دو جبکہ اکشر پٹیل نے ایک وکٹ لی۔ بارباڈوس کے برج ٹاؤن میں کھیلے جانے والے اس فائنل مقابلے میں بھارت نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کرنے کا فیصلہ کیا۔ بھارتی ٹیم کا رنز کے اعتبار سے تو آغاز برق رفتار رہا جہاں اس نے ابتدائی دو اوورز میں 23 رنز بنائے لیکن وہ کپتان روہت شرما اور ان فارم رشبھ پنت کی وکٹوں سے بھی محروم ہوگئی۔ روہت شرما 9 جبکہ ریشبھ پنت بغیر کوئی رن بنائے آؤٹ ہوگئے۔ دونوں کو کیشو مہاراج نے میدان بدر کیا۔34 کے مجموعے پر نمبر ایک ٹی ٹوئنٹی بیٹر سوریا کمار یادیو کو کگیسو رباڈا نے چلتا کیا۔ سوریاکمار نے 3 رنز بنائے۔اس کے بعد اسٹار بلے باز ویرات کوہلی اور اکشر پٹیل کے درمیان 54 گیندوں پر 72 رنز کی پارٹنرشپ بنی جس نے بھارت کی فائٹنگ ٹوٹل کی جانب پیش قدمی کو یقینی بنایا۔ اکشر پٹیل 106 کے مجموعے پر 47 رنز بنا کر رن آؤٹ ہوگئے۔ انہوں نے اپنی اننگز میں 4 چھکے اور ایک چوکا لگایا۔ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ فائنل کے مکمل ٹکٹ نہ بک سکے شیوم ڈوبے کے ساتھ پانچویں وکٹ کی شراکت کے دوران کے ساتھ اپنی نصف سنچری مکمل کی۔ ویرات کوہلی 19ویں اوور میں 76 رنز کی اننگز کھیل کر آؤٹ ہوئے۔ آخری اوور میں 27 رنز کی اننگز کھیلنے والے شیوم ڈوبے اور 2 رنز بنانے والے رویندرا جاڈیجا آؤٹ ہوئے۔ بھارتی ٹیم مقررہ 20 اوورز میں 7 وکٹوں کے نقصان پر 176 رنز بنانے میں کامیاب ہوئی۔ جنوبی افریقہ کی جانب سے کیشو مہاراج اور اینرک نورکیا نے دو دو جبکہ مارکو یانسین اور کگیسو رباڈا نے ایک ایک کھلائی کو آؤٹ کیا۔واضح رہے کہ دونوں ہی ٹیمیں ناقابلِ شکست رہتے ہوئے ورلڈکپ فائنل تک پہنچیں تھیں۔ فائنل مقابلے کےلیے جنوبی افریقہ اور بھارتی ٹیمیں میں کوئی تبدیلی نہیں کی گئی۔بھارتی ٹیم کپتان روہت شرما، ویرات کوہلی، ریشبھ پنت، سوریا کمار یادیو، شیوم ڈوبے، ہاریک پانڈیا، اکشر پٹیل، رویندرا جاڈیجا، ارشدیپ سنگھ، کلدیپ یادیو اور جسپریت بومرا پر مشتمل تھی۔ جنوبی افریقی ٹیم کپتان ایڈن مارکرم کی قیادت میں پہلی مرتبہ ورلڈکپ فائنل کھیل رہی ہے۔ دیگر کھلاڑیوں میں کوئنٹن ڈی کوک، ریزا ہینڈرکس، ہینرک کلاسین، ڈیوڈ ملر، ٹرسٹین اسٹبز، مارکو یانسین، کیشو مہاراج، کگیسو رباڈا، اینرک نورکیا اور تبریز شمسی شامل تھے۔ جنوبی افریقہ نے افغانستان کو پہلے سیمی فائنل میں شکست دے کر ورلڈکپ کی تاریخ میں پہلی مرتبہ فائنل کھیلنے کا اعزاز حاصل کیا تھا۔ دوسری جانب بھارتی ٹیم نے دفاعی چیمپئن انگلینڈ کو چاروں شانے چت کرتے ہوئے تیسری مرتبہ ٹی ٹوئنٹی ورلڈکپ فائنل کھیلنے کا اعزاز حاصل کیا تھا۔

Share and Enjoy !

Shares

اپنا تبصرہ بھیجیں