0

معاہدہ پسند نہیں تو بھکاری حکومت آئی ایم ایف بورڈ میں کیا لینے جاتی ہے، فواد چوہدری

اسلام آباد (مانند نیوز ڈیسک) پاکستان تحریک انصاف کے رہنما اور سابق وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے کہا ہے کہ اگر آئی ایم ایف سے معاہدہ پسند نہیں تو بھکاری  حکومت آئی ایم ایف  بورڈ میں کیا لینے جاتی ہے۔سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب کے ٹوئٹ پر ردعمل دیتے ہوئے فواد چوہدری نے کہا کہ جب آپ ہر وقت Candy Crush ہی کھیلتی رہیں گی تو اسی طرح کی احمقانہ گفتگو کریں گی۔ انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف کی حکومت نے کل قرض 52 ارب ڈالر لیا اس میں سے 38 ارب ڈالر آپ کی حکومتوں کے لیے گئے قرض کی واپسی کی۔انہوں نے مزید کہا کہ اگر آئی ایم ایف سے معاہدہ پسند نہیں تو بھکاری حکومت آئی ایم ایف بورڈ میں کیا لینے جاتی ہے،ختم کریں اور آگے چلیں۔

خبر پر آپ کی رائے

اپنا تبصرہ بھیجیں